زینب کے قاتل کو پھانسی دے دی گئی | حالات حاضرہ | DW | 17.10.2018
  1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages
اشتہار

حالات حاضرہ

زینب کے قاتل کو پھانسی دے دی گئی

پاکستانی صوبہ پنجاب کے شہر قصور میں اس سال جنوری میں چھ سالہ بچی زینب امین کو ریپ اور قتل کرنے والے مجرم عمران علی کو آج بدھ سترہ اکتوبر کو لاہور کی سینٹرل جیل میں مقتولہ کے والد کی موجودگی میں پھانسی دے دی گئی۔

زینب انصاری کے والد اپنی مقتولہ بیٹی کی ایک تصویر کے ساتھ

زینب انصاری کے والد اپنی مقتولہ بیٹی کی ایک تصویر کے ساتھ

پنجاب کے صوبائی دارالحکومت لاہور سے ملنے والی مختلف نیوز ایجنسیوں کی رپورٹوں کے مطابق مجرم عمران علی کو آج علی الصبح جیل حکام کی موجودگی میں تختہ دار پر لٹکا دیا گیا اور اس موقع پر خاص طور پر مقتولہ بچی زینب فاطمہ امین کے والد امین انصاری بھی موجود تھے۔

پاکستان میں اس سال کے اوائل میں زینب کی گمشدگی اور پھر کئی روز بعد اس کی لاش ملنے کے بعد یہ ثابت ہو گیا تھا کہ اسے اغوا کر کے جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا جاتا رہا تھا اور پھر قتل کیے جانے کے بعد اس کی لاش کوڑے کے ایک ڈھیر پر پھینک دی گئی تھی۔

پاکستان کے سب سے زیادہ آبادی والے صوبے پنجاب میں اس خوفناک جرم کے ارتکاب پر عوامی غم و غصہ اتنا شدید تھا کہ ملک بھر میں احتجاجی مظاہرے شروع ہو گئے تھے۔ زینب کے اغوا کا واقعہ ایک سی سی ٹی وی پر اس طرح ریکارڈ بھی ہو گیا تھا کہ مجرم عمران علی کو ایک فوٹیج میں دیکھا جا سکتا تھا کہ کس طرح وہ زینب کی انگلی پکڑے اسے اپنے ساتھ لے جا رہا تھا۔

اپنی گرفتاری کے بعد دوران تفتیش عمران علی نے یہ اعتراف بھی کر لیا تھا کہ اس نے مجموعی طور پر قصور شہر اور اس کے گرد و نواح میں آٹھ بچوں پر جنسی حملے کیے تھے، جن میں سے پانچ بچوں کو اس نے قتل بھی کر دیا تھا۔

اس مجرم کو عدالت نے بچوں کے ریپ اور قتل کے چار مختلف واقعات میں موت کی سزا سنائی تھی۔

لاہور کی سینٹرل جیل کے ایک اہلکار کے مطابق، ’’مجرم عمران علی کو آج جیل حکام اور زینب کے والد کی موجودگی میں پھانسی دے دی گئی۔ بعد میں اس کی لاش تدفین کے لیے اس کے ورثاء کے حوالے کر دی گئی۔‘‘

اس جرم کے مرتکب عمران علی کے خلاف مقتولہ کے والد امین انصاری کا یہ مطالبہ بھی تھا کہ اسے سرعام پھانسی دی جائے۔ لیکن لاہور ہائی کورٹ نے اس بارے میں ایک اپیل کل منگل سولہ اکتوبر کو مسترد کر دی تھی، جس کے بعد آج بدھ کو عمران علی کو جیل میں پھانسی پر لٹکا دیا گیا۔

م م / ع ح / اے ایف پی، ڈی پی اے

ویڈیو دیکھیے 02:22

قصور سانحے کے بعد مقامی افراد کا ردعمل

DW.COM

Audios and videos on the topic

ملتے جلتے مندرجات