پاکستان کا شاندار ’کم بیک‘، میزبان کو ہی ہرا دیا | کھیل | DW | 03.06.2019
  1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages
اشتہار

کھیل

پاکستان کا شاندار ’کم بیک‘، میزبان کو ہی ہرا دیا

عالمی کپ کے اپنے دوسرے میچ میں پاکستان نے میزبان ٹیم انگلینڈ کو چودہ رنز سے شکست دے کر سب کو حیران کر دیا ہے۔ پاکستان کی ٹیم نے تمام شعبوں میں بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔

عالمی کپ کے سلسلے میں ٹرینٹ برج میں پیر کے دن کھیلے گئے اپنے دوسرے میچ میں پاکستان نے انگلینڈ کو ہرا دیا۔ گروپ اسٹیج کے پہلے میچ میں ویسٹ انڈیز سے ہزیمت آمیز شکست کے بعد اس میچ میں پاکستانی ٹیم سے کوئی خاص توقعات وابستہ نہیں کی جا رہی تھیں۔

انگلینڈ نے ٹاس جیت کر پاکستان کو پہلے بیٹنگ کی دعوت دی۔ پاکستانی ٹیم نے مقررہ پچاس اوورز میں آٹھ وکٹوں کے نقصان پر 348 رنز بنائے۔ انگلش ٹیم پچاس اوورز میں نو وکٹوں کے نقصان پر 334 رنز ہی بنا سکی۔ اس شاندار کارکردگی پر پاکستانی وزیر اعظم عمران خان کی طرف سے خصوصی مبارکبادی پیغام بھی جاری کیا گیا۔

 پاکستان کی طرف سے نمایاں بلے باز محمد حفیظ رہے، جنہوں نے 84 رنز کی عمدہ اننگز کھیلی۔ دیگر نمایاں بلے بازوں میں بابر اعظم اور کپتان سرفراز احمد رہے، جنہوں نے بالترتیب تریسٹھ اور پچپن رنز بنائے۔ ماہرین کے مطابق پاکستان نے ایک مرتبہ اپنا روایتی کھیل پیش کیا اور انگلش ٹیم کو تمام شعبوں میں مات دی۔

انگلش ٹیم کی طرف سے جو روٹ اور جوس بٹلر نے سنچریاں اسکور کیں لیکن وہ اپنی ٹیم کو جتوانے میں کامیاب نہ ہو سکے۔ ان دونوں کے علاوہ کوئی بھی انگلش کھلاڑی جم کر نہ کھیل سکا۔ پاکستان کی طرف سے بہترین بولر وہاب ریاض رہے، جنہوں نے تین وکٹیں حاصل کیں۔

شاداب خان اور محمد عامر نے دو دو کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھلائی جبکہ محمد حفیظ اور شعیب ملک نے ایک ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔ بہترین آل راؤنڈ کارکردگی پر محمد حفیظ کو ’مین آف دا میچ‘ قرار دیا گیا۔ پاکستانی ٹیم اس عالمی کپ کے سلسلے میں اپنا اگلا میچ سات جون کو سری لنکا کے خلاف کھیلے گی۔

DW.COM