بیمار پاکستانی لڑکی کی سن لی گئی | معاشرہ | DW | 25.10.2016
  1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

معاشرہ

بیمار پاکستانی لڑکی کی سن لی گئی

اسلام آباد میں امریکی سفارتخانے نے ایک چھ سالہ بیمار پاکستانی لڑکی کو ویزہ جاری کر دیا ہے تاکہ اس کا امریکا میں علاج ہو سکے۔ یہ بچی ریڑھ کی ہڈی کی بیماری میں مبتلا ہے۔

نیوز ایجنسی اے پی کی رپورٹ کے مطابق ماریہ نامی اس لڑکے کے والد شاہد اللہ کا کہنا ہے کہ وہ دنیا بھر میں ان لوگوں کا شکریہ ادا کرتے ہیں جنہوں نے ان کی مدد کی تھی۔ شاہد اللہ کا تعلق متوسط طبقے سے ہے اور راولپنڈی میں ان کی ایک کارپٹ کی چھوٹی سی دکان ہے۔

شاہد اللہ گزشتہ چار برسوں سے  اپنی بیٹی کےعلاج کے لیے کوششیں کر رہے تھے۔ ماریہ ایک جنیاتی بیماری میں مبتلا ہے جسے ’مورکیو سنڈروم‘ کہتے ہیں۔ اس بیماری میں ریڑھ کی ہڈی دب جاتی ہے۔

امریکی سفارتخانے کا کہنا ہے کہ شاہداللہ، ان کی بیٹی ماریہ اور ان کی اہلیہ کا ویزا منظور کر لیا گیا ہے۔  ماریہ کا علاج ڈیلویئر میں ویلینگٹن ہسپتال میں کیا جائے گا۔ ہسپتال ماریہ کا بالکل مفت علاج کرے گا۔

 

اشتہار