’آئی ایم ایف پر مجرمانہ ذمہ داری عائد ہوتی ہے‘ سپراس | حالات حاضرہ | DW | 16.06.2015
  1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

’آئی ایم ایف پر مجرمانہ ذمہ داری عائد ہوتی ہے‘ سپراس

یونان کے وزیر اعظم الیکسس سپراس نے انٹر نیشنل مانیٹری فنڈ پر کڑی تنقید کرتے ہوئے اُسے یونان کے مالیاتی ڈیل تک پہنچنے کی راہ میں اصل رکاوٹوں کا ذمہ دار ٹھہرایا ہے۔

یونانی وزیر اعظم نے منگل کو اپنے پارلیمانی گروپ کے ساتھ ملاقات میں نہایت سخت الفاظ استعمال کرتے ہوئے آئی ایم ایف کو ہدف تنقید بنایا، سپراس کا کہنا تھا،’’ انٹر نیشنل مانیٹری فنڈ پر یونان کے لیے نئی مالیاتی ڈیل طے نہ ہونے کی مجرمانہ ذمہ داری عائد ہوتی ہے‘‘۔ سپراس نے ساتھ ہی اس معاملے میں یونان کو قرضہ دینے والے یورپی قرض دھندگان سے کہا ہے کہ وہ آئی ایم ایف کی پالیسیوں کا جائزہ لیں۔

یونانی وزیر اعظم نے یہ بیانات گزشتہ ویک اینڈ پر یونان، یورپی یونین اور آئی ایم ایف کے درمیان مذاکرات کے بے نتیجہ دور کے اختتام کے تناظر میں دیے ۔ یونانی وزیر اعظم نے قرض دہندگان پر یونان کو لوٹنے کی کوشش کا الزام بھی عائد کیا ہے۔

منگل کو یونان کے پارلیمانی گروپ سے مذاکرات کرتے ہوئے سپراس نے کہا، ’’ اب وقت آ گیا ہے، آئی ایم ایف کی تجاویز کو محض یونان نہیں بلکہ یورپ کی طرف سے جانچنے کا۔ سر دست سب سے زیادہ جس بارے میں بات ہو رہی ہے وہ ہے یونان کے بیل آؤٹ پیکج میں درج سخت ترین بچتی اصلاحات کی اور یورپ خود قرضوں کے بارے میں کسی نتیجہ خیز بحث سے گریز کر رہا ہے‘‘۔

Gemüsemarkt in Agia Paraskevi

یونان میں مہنگائی عروج پر ہے

یونانی وزیر اعظم کا کہنا ہے کہ یورپی یونین اور آئی ایم ایف کی طرف سے قرض دھندگان بیل آؤٹ پیکیج کے بہانے پانچ برسوں سے یونان کو لوٹ رہے ہیں۔ اب یہ پنشن میں جو کٹوتی کا اصرار کر رہے ہیں اس سے ان کے سیاسی مقاصد وابستہ ہیں۔

چالیس سالہ الیکسس سپراس نے کہا ہے کہ یورپی یونین اور آئی ایم ایف کا یہ رویہ یونانی عوام کی تضحیک کے سوا کچھ نہیں جو گزشتہ پانچ سالوں سے اپنے ناکردہ گناہوں کی سزا جھیل رہے ہیں۔ سپراس نے کہا کہ بچتی پیکیج کی تجاویز میں بنیادی اشیاءِ صرف جیسے کہ بجلی پر بھاری ٹیکس لگانے کی جو بات کی جا رہی ہے یہ محض یونانی عوام کی زندگی کو مزید مشکل بنانے کا موجب بنیں گی۔ ان سے یونان کے عوام کی زندگیوں کو زیادہ سے زیادہ مشکل بنا دیا جائے گا۔

Griechenland Krise

یونانی عوام کے ساتھ یورو زون زیادتی کر رہا ہے: یونانی وزیر اعظم

بائیں بازو کی بنیاد پرست سیریزا پارٹی کے اراکین پارلیمان سے خطاب کرتے ہوئے یونانی وزیر اعظم نے کہا کہ یورپ کی طرف سے آئی ایم ایف کی تجاویز کا عوام کے سامنے احتساب کا وقت آ گیا ہے۔

ادھر جرمن چانسلر انگیلا میرکل نے آئندہ جمعرات کو یورو زون کے مجوزہ اعلیٰ سطحی اجلاس میں یونان کے قرضے کے بحران کا حل اور قرض دھندگان کی طرف سے کسی اتفاق پر پہنچنے کے امکانات پر گہرے شکوک کا اظہار کیا ہے۔ ایک بیان میں میرکل کا کہنا تھا،’’ میں نہیں کہہ سکتی کہ آیا لکسمبرگ میں ہونے والے مذاکرات میں یورو زون کا یونان کے بارے میں موقف پر بحث کے بعد کوئی اتفاق ہو پائے گا‘‘۔

DW.COM

اشتہار