موسیقی بزرگ افراد کی زندگی میں بہتری لاتی ہے، تحقیقی رپورٹ | معاشرہ | DW | 01.01.2018
  1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

معاشرہ

موسیقی بزرگ افراد کی زندگی میں بہتری لاتی ہے، تحقیقی رپورٹ

جرمنی اور سوئٹزرلینڈ کے محققیق کے مطابق موسیقی بزرگ شہریوں کی زندگیوں اور ان کی دماغی صحت کی بہتری میں کردار ادا کرتی ہے۔ ڈی ڈبلیو نے اس تحقیقی ٹیم کے سربراہ سے خصوصی بات چیت کی۔

موسیقی کے بزرگ شہریوں کے دماغ پر اثرات اور اس کے نتیجے میں ان کے معیارِ زندگی میں بہتری کے موضوع پر جرمنی اور سوئٹزرلینڈ کے محققین نے ایک مشترکہ تحقیق کی۔

'ہمیں کیا برا تھا مرنا ، اگر ایک بار ہوتا‘

ایمبولینس نہ ملی، لاش ڈنڈے سے لٹکا کر گھر پہنچائی گئی

اس تحقیق میں کہا گیا ہے کہ ایسے افراد جو کوئی آلہء موسیقی بجاتے ہیں، انہوں نے عموماﹰ اسے بچپن میں سیکھا ہوتا ہے۔ تاہم دماغ پر تحقیق کرنے والے جرمن اور سوئس سائنس دانوں کے مطابق بزرگ افراد کو موسیقی کی تربیت دینے سے ان کی زندگیوں میں گراں قدر بہتری دیکھی گئی ہے۔ دماغی صحت پر تحقیق کرنے والے ان محققین کا تعلق جرمن شہر ہینوور اور سوئس شہر جنیوا سے تھا۔

اس تحقیقی ٹیم کے سربراہ اور میوزیکل نیوروفزیولوجسٹ ایکارٹٹ الٹنمؤلر نے ڈی ڈبلیو سے بات چیت میں کہا، ’’اس نئی تحقیق میں بزرگ شہریوں کے معیار زندگی پر موسیقی کے اثرات کا تجزیہ کیا گیا ہے۔ اس کا مقصد یہ توجہ دلانا ہے کہ معمر افراد کو کس طرح موسیقی کے ذریعے زندگی کی رمق دی جا سکتی ہے اور وہ کس طرح موسیقی سیکھ کر اپنی زندگیوں کو بہتر بنا سکتے ہیں۔‘‘

اس تحقیق میں 64 تا 76 برس کی عمروں کے سو سے زائد افراد کو شامل کیا گیا اور انہيں پیانو بجانے کی تربیت یا نظری موسیقی کی تعلیم دی گئی۔ اس تحقیق میں فقط ان معمر افراد کو شامل کیا گیا تھا، جن کا زندگی میں کبھی موسیقی سے کوئی تعلق نہیں رہا۔ یہ تحقیق موسم گرما تک جاری رہی گی۔

ویڈیو دیکھیے 11:20
Now live
11:20 منٹ

’عورت کی مشقت کی نہ اُجرت نہ ہی گنتی‘

اس تحقیق کے متوقع نتائج بتاتے ہوئے الٹنمؤلر نے کہا کہ اس سے ان معمر افراد کے ذہنی تناؤ میں کمی اور صحت میں اضافے کی توقع کی جا رہی ہے۔ اس کے علاوہ اس تحقیق میں یہ بھی دیکھا جا رہا ہے کہ موسیقی کی وجہ سے ان افراد کی یادداشت، ذہنی گرفت اور سوچوں پر کیا فرق پڑتا ہے۔

الٹنمؤلر  نے مزید بتایا کہ اس سے قبل بیس تا تیس برس کے افراد کا مطالعہ کیا گیا تھا اور اس سے معلوم ہوا تھا کہ فقط پیانو کی مشق سے ہی ان نوجوانوں میں سننے اور حرکت کرنے کی حسیات میں نمایاں اضافہ پیدا ہوا تھا جب کہ یہ اضافہ بعد میں بھی کئی ہفتوں تک قائم رہا۔ ’’اب ہم اپنی اُسی تحقیق کو ان معمر افراد پر بھی آزما رہے ہیں اور ہمیں امید ہے کہ ان سے ان بزرگوں کی ذہنی قوت میں اضافہ ہو گا۔‘‘

 

DW.COM

Audios and videos on the topic