محمد علی کی تدفین جمعہ دس جون کو ان کے آبائی شہر میں | کھیل | DW | 05.06.2016
  1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

کھیل

محمد علی کی تدفین جمعہ دس جون کو ان کے آبائی شہر میں

جمعہ تین جون کو چوہتر برس کی عمر میں انتقال کر جانے والے عظیم باکسر اور سابق عالمی چیمپئن محمد علی کی ایک ہیرو کے طور پر تدفین آئندہ جمعے دس جون کے روز امریکی ریاست کینٹکی میں ان کے آبائی شہر لوئی وِل میں کی جائے گی۔

نیوز ایجنسی روئٹرز کی اتوار پانچ جون کو ملنے والی رپورٹوں کے مطابق محمد علی کے جسد خاکی کو لوئی وِل شہر میں ایک عوامی جلوس کی شکل میں مقامی اسٹیدیم تک لے جایا جائے گا، جہاں ان کی یاد میں ایک بڑی عوامی تقریب منعقد کی جائے گی۔

شہر کی انتظامیہ کے مطابق ’عظیم ترین‘ کھلاڑی اور گزشتہ صدی کی اہم ترین شخصیت قرار دیے جانے والے محمد علی ایک ایسے انسان تھے، جن سے دنیا بھر میں ان کے مداح بے پناہ محبت کرتے تھے اور جنہوں نے باکسنگ کے کھیل کے ساتھ ساتھ نسلی تعصب اور جنگوں کے خلاف اور سیاہ فام آبادی کے لیے برابر کے شہری حقوق کی جدوجہد کرنے والے کارکن کے طور پر بھی بے مثال خدمات انجام دی تھی۔

محمد علی کے خاندان کے ترجمان باب گَنل نے ہفتے کی رات ایک پریس کانفرنس میں صحافیوں کو بتایا کہ لوئی وِل میں ان کی میموریل سروس کے موقع پر دنیا کے اس ’پسندیدہ ترین ایتھلیٹ‘ کی بہت سے مختلف شعبوں میں نمایاں خدمات کو بھی خراج عقیدت پیش کیا جائے گا، جن کی وجہ سے محمد علی اپنی زندگی میں ہی اپنی انسان دوستی کی وجہ سے اپنے لیے ایک ’عالمگیر مقام‘ حاصل کر چکے تھے۔ باب گَنل کے مطابق محمد علی کی یاد میں اس اجتماع سے بہت سی دیگر معروف شخصیات کے علاوہ سابق امریکی صدر بل کلنٹن بھی خطاب کریں گے۔

محمد علی نے، جو پیدائشی طور پر ایک مسیحی تھے اور جن کا نام کیسیئس کلے تھا، جوانی میں ہی اسلام قبول کر لیا تھا اور اس کے بعد سے دنیا انہیں زیادہ تر صرف محمد علی کے طور پر جانتی تھی۔

17 جنوری 1942 کو لوئی وِل میں پیدا ہونے والے محمد علی تین مرتبہ باکسنگ کے عالمی ہیوی ویٹ چیمپئن بنے تھے۔ وہ تین عشروں سے بھی زائد عرصے سے رعشہ کے مرض یا پارکِنسن سنڈروم کا شکار بھی تھے۔

محمد علی کا انتقال امریکی ریاست ایریزونا کے شہر فینکس کے ایک ہسپتال میں ہوا تھا، جہاں سے ان کی میت اگلے ایک دو روز میں لوئی وِل پہنچا دی جائے گی۔ ان کا انتقال نظام تنفس میں پیدا ہونے والی طبی پیچیدگیوں کی وجہ سے جمعہ تین جون کی رات ہوا تھا۔

ان کی یاد میں مرکزی تعزیتی تقریب جمعہ دس جون کو لوئی وِل میں کے ایف سی سینٹر میں سہ پہر دو بجے شروع ہو گی، جس میں 20 ہزار سے زائد افراد کے بیٹھنے کی گنجائش ہے۔ یہ میموریل سروس کے ایف سی سینٹر کی ویب سائٹ کے ذریعے انٹرنیٹ پر بھی براہ راست دکھائی جائے گی۔

DW.COM

اشتہار