1. مواد پر جائیں
  2. مینیو پر جائیں
  3. ڈی ڈبلیو کی مزید سائٹس دیکھیں
تصویر: AP

عراق اور افغانستان کی جنگيں ناکام رہيں، تازہ سروے

عاصم سليم
2 اگست 2014

نيوز ايجنسی ايسوسی ايٹڈ پريس کی طرف سے امريکا ميں کرائے جانے والے ايک تازہ سروے ميں يہ بات سامنے آئی ہے کہ افغانستان اور عراق ميں امريکی عسکری کارروائيوں کو ہر چار ميں سے تين امريکی شہری ’ناکامی‘ سے تعبير کرتے ہيں۔

https://www.dw.com/ur/%D8%B9%D8%B1%D8%A7%D9%82-%D8%A7%D9%88%D8%B1-%D8%A7%D9%81%D8%BA%D8%A7%D9%86%D8%B3%D8%AA%D8%A7%D9%86-%DA%A9%DB%8C-%D8%AC%D9%86%DA%AF%D9%8A%DA%BA-%D9%86%D8%A7%DA%A9%D8%A7%D9%85-%D8%B1%DB%81%D9%8A%DA%BA-%D8%AA%D8%A7%D8%B2%DB%81-%D8%B3%D8%B1%D9%88%DB%92/a-17827454

ہر چار ميں سے تين امريکی شہريوں کا کہنا ہے کہ تاريخ ميں امريکا کی افغانستان اور عراق کی جنگوں کو مکمل طور پر ناکام کارروائيوں کے طور پر ديکھا جائے گا اور قريب اتنے ہی شہريوں کا ماننا ہے کہ ان دونوں ممالک سے انخلاء کا فيصلہ درست تھا۔

گزشتہ ماہ امريکا ميں AP-GfK کی طرف سے کرائے جانے والے ايک سروے کے مطابق امريکی شہريوں کی اکثريت اس بارے ميں پر اعتماد نہيں ہے کہ افغانستان يا عراق ميں حقيقی معنوں ميں جمہوری حکومتیں قائم ہو سکیں گی۔ سروے ميں شامل 78 فيصد لوگوں کی رائے ہے کہ افغانستان ميں مستحکم جمہوری حکومت کے قيام کا يا تو ’کوئی امکان نہيں ہے‘ يا پھر اس کے ’زيادہ امکانات نہيں ہيں۔‘ سروے ميں شامل 80 فيصد امريکيوں کی عراق کے بارے ميں بھی يہی رائے ہے۔

عراق ميں ان دنوں اسلامی رياست نامی سنی شدت پسند تنظيم سرگرم ہے
عراق ميں ان دنوں اسلامی رياست نامی سنی شدت پسند تنظيم سرگرم ہےتصویر: Reuters

AP-GfK کے مطالعے ميں شامل 70 فيصد امريکيوں کا کہنا ہے کہ عراق سے 2011ء ميں مکمل امريکی انخلاء اور افغانستان سے 2014ء کے آخر تک زيادہ تر امريکی افواج کا انخلاء، دونوں ہی درست فيصلے ہيں۔ ان دونوں جنگوں ميں قريب 6,800 امريکی فوجی لقمہ اجل بن چکے ہيں۔

اس وقت 51 فيصد امريکيوں کا کہنا ہے کہ آنے والے وقت ميں افغانستان کی صورتحال مزيد بگڑے گی جبکہ 58 فيصد امريکيوں کی عراق کے حالات کے بارے ميں بھی يہی رائے ہے۔

عراق اور افغانستان کی صورتحال ايک دوسرے سے کافی مختلف ہے۔ تاہم ان دونوں ہی ممالک ميں امريکا ايک دہائی سے زائد عرصے سے ايسی جمہوری حکومتوں کے قيام کی کوششيں کرتا آيا ہے، جو اپنے علاقوں کی با اثر نگرانی کرتے ہوئے امريکی سر زمين کو لاحق خطرات ميں کمی لا سکيں۔ اور ان دونوں ہی ملکوں ميں امريکی مقاصد ناکامی سے دوچار ہيں۔ عراق اور افغانستان کے مستقبل کوکمزور ليڈرشپ، کمزور اداروں، بغاوت، نسلی تنازعات اور انتہا پسند تحريکوں سے خطرات لاحق ہيں۔

AP-GfK کا يہ مطالعہ چوبيس تا اٹھائيس جولائی کرايا گيا تھا اور اس کے ليے امکانات پر مبنی KnowledgePanel نامی ايک آن لائن پينل کا استعمال کيا گيا تھا۔ سروے ميں 1,044 بالغ امريکی شہريوں سے ان کی رائے جاننے کے ليے انٹرويوز ليے گئے تھے۔ سروے ميں غلطی کی گنجائش کی شرح منفی يا مثبت 3.4 بتائی گئی ہے۔

ڈی ڈبلیو کی اہم ترین رپورٹ سیکشن پر جائیں

ڈی ڈبلیو کی اہم ترین رپورٹ

پاکستان صحت کے شعبے میں تباہی کے دہانے پر، عالمی ادارہ صحت

ڈی ڈبلیو کی مزید رپورٹیں سیکشن پر جائیں
ہوم پیج پر جائیں