جرمنی: کرسمس مارکیٹ کے قریب دھماکا خیز مواد برآمد | حالات حاضرہ | DW | 01.12.2017
  1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

جرمنی: کرسمس مارکیٹ کے قریب دھماکا خیز مواد برآمد

جرمن پولیس کے مطابق برلن کے نواح میں پوٹس ڈام شہر کی ایک کرسمس مارکیٹ کے قریب ایک مشتبہ تھیلے میں دھماکا خیز مواد برآمد ہوا ہے۔ گزشتہ برس برلن کی ایک کرسمس مارکیٹ کو دہشت گردانہ حملے کا نشانہ بنایا گیا تھا۔

جرمن شہر پوٹس ڈام میں ایک کرسمس مارکیٹ کے قریب ایک مشتبہ بیگ کی موجودگی کی اطلاع ملنے کے بعد سکیورٹی حکام نے اس کے اردگرد کا علاقہ خالی کرا لیا تھا۔ بعد ازاں وفاقی جرمن ریاست برانڈنبرگ کی پولیس کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان میں بتایا گیا کہ اس مشتبہ بیگ میں دھماکا خیز مواد ملا ہے۔

’دہشت گردی کی منصوبہ بندی‘: جرمنی میں چھ شامی مہاجرین گرفتار
برلن کار حادثہ، ’کیا یہ ایک حملہ تھا‘؟
جرمنوں کے لیے دہشت گردی اور مہاجرت ’خطرات‘، مطالعاتی رپورٹ

ویڈیو دیکھیے 02:00
Now live
02:00 منٹ

جرمنی میں حالیہ دہشت گردانہ حملے کب کب ہوئے؟

برانڈنبرگ پولیس کی جانب سے مائکروبلاگنگ ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری کردہ ایک پیغام میں کہا گیا، ’’بیگ میں دھماکا خیز مواد ملنے کی تصدیق ہو گئی ہے۔ شہر کے وسط میں اس علاقے کو خالی رکھا جا رہا ہے۔ براہ مہربانی لاؤڈ اسپیکر کے ذریعے کیے جانے والے ہمارے اعلانات پر توجہ دیں۔‘‘

پوٹس ڈام کے ایک مقامی اخبار کی رپورٹوں کے مطابق یہ مشتبہ پیکج کرسمس مارکیٹ کے قریب واقع ایک میڈیکل اسٹور کو پوسٹ کیا گیا تھا۔ مقامی میڈیا کے مطابق پوسٹ کے ذریعے بھیجے گئے اس پیکٹ کا سائز تقریباﹰ چالیس ضرب بیس انچ تھا۔ پولیس کا یہ بھی بتایا ہے کہ خصوصی فورسز نے بروقت کارروائی کرتے ہوئے اس دھماکا خیز ڈیوائس کو ناکارہ بنا دیا ہے۔

جرمنی میں ہائی الرٹ

گزشتہ برس برلن کی ایک کرسمس مارکیٹ میں ٹرک سے کیے گئے ایک دہشت گردانہ حملے میں بارہ افراد ہلاک ہو گئے تھے۔ یہ حملہ جرمنی میں پناہ کے ایک مسترد درخواست گزار نے کیا تھا۔ انیس عامری نامی اس حملہ آور کا تعلق تیونس سے تھا۔

اس واقعے کے بعد سے جرمنی میں ہائی الرٹ تھا اور گزشتہ ہفتے ملک میں کرسمس مارکیٹ کے آغاز کے ساتھ سکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے تھے۔ کرسمس مارکیٹوں کی سکیورٹی یقینی بنانے کے لیے کنکریٹ کے بیریئر نصب کیے گئے ہیں اور کئی جگہوں پر پولیس نے ان بلاکس کو کسی تحفے کی طرح ’گفٹ پیپر‘ میں پیک کر رکھا ہے۔ 

DW.COM

Audios and videos on the topic

اشتہار