1. مواد پر جائیں
  2. مینیو پر جائیں
  3. ڈی ڈبلیو کی مزید سائٹس دیکھیں
Bharat Biotech Firmenlogo | Coronavirus | Unternehmen aus Indien
تصویر: Pavlo Gonchar/Zuma/picture alliance

بھارت کی ملکی ساختہ ایک اور ویکسین استعمال کے لیے منظور

21 اگست 2021

بھارت کے ادویات کے نگران ادارے نے ایک اور ویکسین کی ہنگامی بنیادوں پر استعمال کی باضابطہ منظوری دے دی ہے۔ یہ ویکسین بھی ایک بھارتی دوا ساز ادارے نے تیار کی ہے۔

https://p.dw.com/p/3zJJS

اس نئی ویکسین کو ایک فارماسوٹیکل کمپنی زیڈس کاڈیلا (Zydus Cadila) نے تیار کیا ہے۔ اس کی منظوری بھارت کے محکمہ بائیوٹیکنالوجی نے دی ہے۔ اس کمپنی نے یہ دعویٰ بھی کیا ہے کہ یہ ویکسین دنیا کی پہلی ڈی این اے (ڈی آکسی رائبونیوکلیئک ایسڈ) پر تیار کی گئی ہے۔  قبل ازیں فائزر بائیو این ٹیک اور موڈیرنا نامی ویکسینوں کی تیاری میں آر این اے (رائبو نئوکلیئک ایسڈ) کا استعمال کیا گیا تھا۔

بھارت: کورونا بحران نے بالی ووڈ کا رنگ ہی بدل دیا

ایک منفرد ویکسین

 ڈی این اے (ڈی آکسی رائبونیوکلیئک ایسڈ) پر تیار کی گئی یہ منفرد ویکسین بارہ برس سے بڑی عمر کے بچوں کو بھی لگائی جا سکتی ہے۔ اس کا نام زیکو وی ڈی (ZyCoV-D) رکھا گیا ہے۔ یہ ویکسین انجیکشن کے بغیر بھی استعمال کی جاسکتی ہے۔

Indien Impfstoff-Lieferung an Bhutan und Malediven
بھارتی دوا سازاداروں نے اب تک چھ ویکسینیں تیار کی ہیںتصویر: Channi Anand/AP/picture alliance

اس مناسبت سے دواساز کمپنی گزشتہ چند ہفتوں سے اس ویکسین کے انسانوں پر آزمائشی ٹیسٹ جاری رکھے ہوئے تھی۔ اس آزمائشی عمل کی تکمیل پر ہی بھارت کے بائیوٹیکنالوجی کے مرکزی محکمے نے اس کی ہنگامی ضرورت کے تحت استعمال کی اجازت دی ہے۔

تین خوراکوں والی ویکسین

زیکو وی ڈی کی کم سے کم تین خوراکیں دینا ضروری ہے۔ جب یہ دی جاتی ہے تو یہ انسانی جسم میں 'سارس کوو ٹو‘ وائرس کے انسداد کے حامل پروٹین میں اضافہ کر دیتی ہے اور یہ اضافہ انسان کے مدافعتی نظام کو تقویت دیتا ہے۔

بھارت: کووڈ کی وجہ سے نوجوانوں کی امیدیں چَکنا چُور

یہ امر اہم ہے کہ بھارتی محکمہ بائیوٹیکنالوجی اس ویکسین کی تیاری میں دوا ساز ادارے زیڈس کاڈیلا کا پارٹنر بھی ہے۔ یہ بھی بتایا گیا کہ یہ ویکسین کسی بھی وائرس کے متغیر یا ویریئنٹ کے خلاف بھی اثر پذیر ہو گی۔ بھارت میں حالیہ مہینوں میں ڈیلٹا ویرئینٹ نے انسانی بستیوں میں تباہی پھیلا دی تھی۔

Indien Kaschmir | Impfprogramm gegen Coronavirus
چھ میں سے زیادہ ویکسینیں بھارتی دوا ساز کمپنی 'بھارت بائیوٹیک‘ تیار کر رہا ہےتصویر: Nasir Kachroo/NurPhoto/picture alliance

چھٹی ویکسین

بھارت میں تیار کی جانے والی زیکو وی ڈی چھٹی ویکسین ہے۔ قبل ازیں بھارتی حکومت موڈیرنا، آکسفورڈ ایسٹرا زینیکا (کوی شیلڈ)، کوویکسین کی ہنگامی ضرورت کے تحت استعمال کی باضابطہ اجازت دے چکی ہے۔ یہ تمام ویکسینیں بھارتی دوا ساز کمپنی 'بھارت بائیوٹیک‘  غیر ملکی فارماسوٹیکل کمپنیوں سے اجازت یا لائسینس حاصل کرنے کے بعد تیار کر رہا ہے۔ ان کے علاوہ روس کی ویکسین اسپٹنک فائیو اور جانسن اینڈ جانسن کی بھی منظوری دی جا چکی ہے۔

بھارت میں کورونا سے ہلاکتوں کی تعداد اب چار لاکھ سے متجاوز

بھارت میں ویکسینیشن

بھارت اب تک پانچ سو سینتالیس ملین ویکسین کی خوراکیں ملکی آبادی کو فراہم کر چکا ہے۔ اس ملک میں وسیع پیمانے پر ویکسین لگانے کا سلسلہ رواں برس وسطِ جنوری میں شروع کیا گیا تھا۔

Indien Coronavirus Pandemie
بھارت اب تک پانچ سو سینتالیس ملین ویکسین کی خوراکیں ملکی آبادی کو فراہم کر چکا ہےتصویر: David Talukdar/NurPhoto/picture alliance

اربوں خوراکیں دینے کے بعد اب بھارت میں کووڈ انیس بیماری کی صورت حال قدرے بہتر ہوئی ہے۔ کورونا وائرس سے پھیلنے والی بیماری کووڈ انیس سے بھارت میں ہونے والی ہلاکتیں چار لاکھ تینتیس ہزار سے متجاوز ہو چکی ہیں۔

 ع ح/ ع آ (اے ایف پی)

ملتے جلتے موضوعات سیکشن پر جائیں

ملتے جلتے موضوعات

ڈی ڈبلیو کی اہم ترین رپورٹ سیکشن پر جائیں

ڈی ڈبلیو کی اہم ترین رپورٹ

پشاور حملہ: ذمہ داری ٹی ٹی پی نے قبول کر لی، 60 سے زائد ہلاک

ڈی ڈبلیو کی مزید رپورٹیں سیکشن پر جائیں
ہوم پیج پر جائیں