کیا طلبا و طالبات کو علیحدہ کرنا غلط فیصلہ ہے؟ | معاشرہ | DW | 26.12.2017
  1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

معاشرہ

کیا طلبا و طالبات کو علیحدہ کرنا غلط فیصلہ ہے؟

پاکستان کے صوبے خیبر پختونخواہ کی ’باچا خان یونیورسٹی‘ نے طلبا کے طالبات کے ساتھ  گھومنے پھرنے پر پابندی عائد کر دی ہے اور یونیورسٹی کی حدود میں سگریٹ نوشی کو بھی ممنوع قرار دے دیا گیا ہے۔

پاکستانی میڈیا میں شائع ہونی والی رپورٹس کے مطابق یونیورسٹی نے یہ نوٹیفیکیشن اس ماہ کے آغاز میں جاری کیا تھا جس کے تحت لڑکیوں کے ساتھ گھومنے پھرنے، سگریٹ پینے، ہوسٹل اور یونیورسٹی کی عمارتوں کی چھتوں پر جانے پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔

سوشل میڈیا کے کئی صارفین نے یونیورسٹی کے اس اقدام کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ پاکستان کے انگریزی اخبار ’ڈان‘ نے اس فیصلے کے خلاف اپنے اداریے میں لکھا ہے،’’ یونیورسٹی انتظامیہ کا یہ کہنا ہے کہ لڑکے اور لڑکیوں کے کم ملنے سے طلبا کے وقت کا ضیاع نہیں ہوگا، یہ ایک غیر عقلی فیصلہ ہے۔ طلبا اور طالبات اور اساتذہ کے مابین  گفتگو اور میل جول سیکھنے کے عمل کے لیے ضروری ہے۔‘‘ ڈان کے اداریے میں مزید لکھا گیا ہے کہ یونیورسٹی کیمپس میں ’اخلاقی پولیسینگ‘ ایک خطرناک رجحان ہے جو کہ ایک روشن خیال تعلیمی ماحول کے پنپنے کی حوصلہ شکنی کرتا ہے۔

Pakistan Schusswechsel und Explosionen auf Universitätscampus in Charsadda (Getty Images/AFP/A. Majeed)

گزشتہ برس باچا خان یونیورسٹی پر عسکریت پسندوں نے حملہ کر دیا تھا

واضح رہے کہ گزشتہ برس باچا خان یونیورسٹی پر عسکریت پسندوں نے حملہ کر دیا تھا جس میں کئی طلبا ہلاک ہو گئے تھے۔ تجزیہ کاروں کی رائے میں اس حملے کے پیش نظر یونیورسٹی انتظامیہ کو خیال رکھنا چاہیے کہ یہاں برادشت اور روشن خیالی فروغ پائے نا کہ عسکریت پسندوں کی سوچ کا پرچار کیا جائے۔

سوشل میڈیا کے سدھیر نامی ایک صارف نے لکھا،’’ یہ طلبا و طالبات عاقل اور بالغ ہیں اور صحیح اور غلط کا فیصلہ خود کر سکتے ہیں۔ یونیورسٹی کی جانب سے ایسے احکامات جاری کرنا سمجھ سے باہر ہے۔‘‘

ٹوئٹر کے ایک صارف فیصل تنولی نے لکھا،’’ پورے زور سے اسلامائزیشن کا نفاذ‘‘۔

کچھ صارفین نے اس اقدام کی تائید کی۔ خان احمد خان نے لکھا،'' یہ ایک اچھا اقدام ہے۔ خیبر پختونخواہ جیسے قدامت پسند صوبے میں اب اس فیصلے کی وجہ سے کچھ لوگ اپنی بیٹیوں کو یونیورسٹی بھیجنے پر رضا مند ہو جائیں گے۔‘‘

ویڈیو دیکھیے 03:34
Now live
03:34 منٹ

فاٹا کے اسکولوں کی دگرگوں صورتحال

Audios and videos on the topic

اشتہار