کپتان کی شادی کی خبر پر سوشل میڈیا متحرک | معاشرہ | DW | 08.01.2018
  1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

معاشرہ

کپتان کی شادی کی خبر پر سوشل میڈیا متحرک

پاکستانی ذرائع ابلاغ اور سوشل میڈیا پر پاکستان کی سیاسی جماعت پی ٹی آئی کے سربراہ عمران خان کی تیسری مبینہ شادی کی خبریں اب بھی لوگوں میں توجہ کا مرکز بنی ہوئی ہے۔

پاکستانی ذرائع ابلاغ کی ان خبروں کے بعد کہ عمران خان تیسری شادی کر چکے ہیں، سوشل میڈیا کی ویب سائٹس پر ایک نہ تھمنے والا قیاس آرائیوں کا سلسلہ شروع ہو گیا ہے۔ اس وقت بھی پاکستان میں ٹوئٹر پر سب سے زیادہ ٹرینڈ کرتا ہوا موضوع بشریٰ مانیکا ہے جو کہ عمران خان کی مبینہ طور پر تیسری بیوی کا نام بتایا جارہا ہے۔ شادی کی ان خبروں میں کتنی صداقت ہے , اس بارے میں پاکستان تحریک انصاف کے آفیشل پیج پر ایک پیغام جاری کیا گیا ہے، جس میں اس بات کی تصدیق کی جا چکی ہے کہ بشری مانیکا نامی خاتون کو تحریک انصاف کے چیئرمین کی جانب سے شادی کا پیغام بھیجا گیا ہے، جس پر ابھی اس خاتون کی جانب سے کوئی حتمی جواب نہیں مل سکا ہے تاہم جیسے ہی جواب موصول ہو گا، عمران خان اس بارے میں مناسب طریقے سے اعلان کریں گے۔

عمران خان کی اپنی روحانی پیرنی سے شادی؟ خبر ہے گرم

’اور بندھن ٹوٹ گیا‘ کپتان ایک بار پھر تنہا

عوام کی انتہائی دلچسپی کا باعث بنی ان خبروں  کےحوالے سے صحافی عائشہ احد ملک کہتی ہیں کہ عمران خان نے شادی کر لی ہے یا صرف رشتہ بھیجا ہے ، اس معاملے کو اچھالنا نہیں چاہئے۔

ملک کے ایک اور سنئیر صحافی حامد میر اپنی ایک ٹوئیٹ میں پوچھتے ہیں کہ کیا واقعی عمران خان کی مبینہ شادی ان کا ذاتی معاملہ ہے؟

سینئیر صحافی آفتاب اقبال بھی ایک ٹوئٹر پیغام میں اس بات پر افسوس کا اظہار کر رہے ہیں کہ غیر ذمہ دار صحافت اور چند بیوقوف سوشل میڈیا صارفین ایک نہایت افسوسناک دن کی وجہ بنے ہیں۔

یاد رہے کہ تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کی مبینہ طور پر بشریٰ مانیکا نامی خاتون سے تیسری شادی ہوجانے کی خبر سب سے پہلے اس برس چھ جنوری کو سامنے آئی جس کے بعد ملکی میڈیا اور سماجی رابطوں کی ویب سائٹس پر اس معاملے کو بڑے پیمانے پر کوریج دی جا رہی ہے۔

 

 

DW.COM

اشتہار