پاکستان میں ریل گاڑی بس سے ٹکرا گئی، انیس سکھ یاتری ہلاک | حالات حاضرہ | DW | 03.07.2020
  1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages
اشتہار

حالات حاضرہ

پاکستان میں ریل گاڑی بس سے ٹکرا گئی، انیس سکھ یاتری ہلاک

پاکستانی صوبہ پنجاب کے شہر شیخوپورہ میں ایک ریل گاڑی کے ایک بس سے ٹکرا جانے کے نتیجے میں کم از کم انیس سکھ یاتری ہلاک ہو گئے۔ یہ حادثہ ایک ایسی ریلوے کراسنگ پر پیش آیا، جہاں ریلوے کا کوئی نگران کارکن موجود نہیں تھا۔

وفاقی دارالحکومت اسلام آباد سے موصولہ رپورٹوں کے مطابق سکھ یاتریوں سے بھری ہوئی بس ایک ریلوے کراسنگ عبور کر رہی تھی کہ اسی وقت ایک طرف سے آنے والی ایک ریل گاڑی کی زد میں آ گئی۔

مقامی پولیس کے سربراہ محمد اکرم نے نیوز ایجنسی ڈی پی اے کو بتایا کہ شیخوپورہ کی شہری حدود میں پیش آنے والے اس افسوس ناک واقعے میں کم از کم 17 سکھ یاتری ہلاک ہو گئے۔ مقامی میڈیا نے ہلاک شدگان کی تعداد 19 بتائی ہے۔

محمد اکرم کے مطابق اس حادثے میں زخمی ہونے والے متعدد افراد میں سے کئی کی حالت نازک ہے اور ہلاک شدگان کی تعداد میں اضافے کا خدشہ ہے۔ یہ سکھ یاتری شیخوپورہ کے قریبی شہر ننکانہ صاحب جا رہے تھے، جو سکھ مت کے پیروکاروں کے لیے ان کے مقدس ترین مذہبی مقامات میں سے ایک ہے۔

پاکستان ریلوے کے ایک ترجمان کے مطابق جو ریل گاڑی ان سکھ زائرین کی بس سے ٹکرائی، وہ جنوبی شہر کراچی سے پنجاب کے صوبائی دارالحکومت لاہور جا رہی تھی۔

م م / ش ح (ڈی پی اے)