ماریا شارا پووا نے ٹینس کو خیرباد کہہ دیا | کھیل | DW | 27.02.2020
  1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages
اشتہار

کھیل

ماریا شارا پووا نے ٹینس کو خیرباد کہہ دیا

روس کی لیجنڈری ٹینس اسٹار ماریا شاراپووا نے مسلسل انجریز کی وجہ سے ٹینس کو خیرباد کہہ دیا ہے۔ انہوں نے اپنی ریٹائرمنٹ کا اعلان فیشن میگزین ’ووگ‘ اور ’وینیٹی فیئر‘ میں لکھے گئے مضامین میں کیا۔

شاراپووا پانچ گرینڈ سلیم ٹورنامنٹس جیتنے میں کامیاب رہیں۔ وہ مختلف اوقات میں مجموعی طور پر سترہ ہفتوں تک عالمی نمبر  ایک بھی رہی تھیں۔

ان کو سن 2016 میں ممنوعہ دوا استعمال کرنے پر پندرہ مہینے کی پابندی کا بھی سامنا کرنا پڑا۔ اس پابندی کے ختم ہونے کے بعد وہ پوری طرح کھیل میں واپس آنے کی جد وجہد تو کرتی رہیں لیکن کوئی بڑی کارکردگی دکھانے سے قاصر رہیں۔

شاراپووا کی ریٹائرمنٹ کے اعلان کے بعد ہی ان کے ساتھی کھلاڑیوں نے انہیں بھرپور انداز میں خراج تحسین پیش کرتے ہوئے انہیں لیجنڈ اور گریٹ چیمپیئن کے الفاظ سے نوازا۔ سربیا سے تعلق رکھنے والے مشہور کھلاڑی نوواک جوکووچ نے انہیں ٹینس کی ایک اسمارٹ کھلاڑی قرار دیتے ہوئے کہا کہ وہ ذہنی طور پر چیمپیئن بننے کی سوچ رکھتی تھیں اور یہ انہوں نے عملی طور پر بھی ثابت کیا۔

Spanien Madrid Scharapowa spielt Mutua Madrid Open (picture-alliance/Geisler-Fotopress)

شاراپووا مختلف اوقات میں مجموعی طور پر سترہ ہفتوں تک عالمی نمبر  ایک بھی رہی تھیں

مختلف انجریز کی وجہ سے گزشتہ دو تین برسوں میں روسی کھلاڑی کے کھیل میں گراوٹ پیدا ہونا شروع ہو گئی اور بتدریج اُن کی عالمی پوزیشن میں کمی آتی گئی۔ وہ ریٹائرمنٹ پر جانے سے قبل تین سو تہترویں پوزیشن پر تھیں۔

رواں برس کے پہلے گرینڈ سلیم ٹورنامنٹ آسٹریلین اوپن میں بھی وہ بہتر کارکردگی دکھانے سے محروم رہیں تھیں۔ رواں برس کے دوران ٹینس  کو خیرباد کہنے والی وہ دوسری عالمی نمبر ایک ہیں۔ قبل ازیں کیرولین ووزنیاکی بھی انجریز کی وجہ سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کر چکی ہیں۔

Maria Sharapova Australien Melbourne Tennis Australien Open (Getty Images/Hannah Peters)

شاراپووا پانچ گرینڈ سلیم ٹورنامنٹس جیتنے میں کامیاب رہیں

 ماریا شارا پوووا کو ٹینس کھیل میں شہرت اُس وقت حاصل ہوئی جب سن 2004 میں سترہ برس کی عمر میں انہوں نے لندن میں کھیلا جانے والا گرینڈ سلیم ٹورنامنٹ ومبلڈن جیتا تھا۔ وہ سن 2005 میں اٹھارہ برس کی عمر میں عالمی نمبر ایک بن گئیں۔ اسی سال وہ یو ایس اوپن بھی جیتنے میں کامیاب رہی تھیں۔ سن 2012 میں وہ ایک ہی وقت میں چاروں گرینڈ سلیم ٹورنامنٹ جیتے والی کھلاڑی بن گئی تھیں۔

روسی علاقے سائبیریا میں پیدا ہونے والی شاراپووا نے چار برس کی عمر میں ٹینس کا ریکٹ پکڑ کر سوچی شہر میں کھیلنے کی ابتدا کی تھی۔ اُس کے والدین چرنوبیل جوہری حادثے کے بعد نقل مکانی کر کے سوچی شہر میں آباد ہوئے تھے۔

ع ح ⁄ ع ا (اے ایف پی، ڈی پی اے)

DW.COM