ڈی ڈبلیو کی نئی ویب سائٹ وزٹ کیجیے

dw.com کے بِیٹا ورژن پر ایک نظر ڈالیے۔ ابھی یہ ویب سائٹ مکمل نہیں ہوئی۔ آپ کی رائے اسے مزید بہتر بنانے میں ہماری مدد کر سکتی ہے۔

  1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages
اشتہار
اشتہار
اشتہار

حالات حاضرہ

عالمی خبریں | 27.06.2022 | 07:26

جنگ موسم سرما سے پہلے ختم کرنے کی ضرورت ہے، یوکرینی صدر

یوکرینی صدر وولودیمیر زیلنسکی نے کہا ہے کہ ملک میں جاری جنگ موسم سرما شروع ہونے سے پہلے ختم کرنے کی ضرورت ہے۔ یورپی سفارتی ذرائع کے مطابق انہوں نے یہ مطالبہ جی سیون رہنماؤں کے جرمنی میں جاری اجلاس میں ویڈیو لنک کے ذریعے کیا ہے۔ زیلنسکی نے روس کے خلاف مزید سخت اقدامات اٹھانے اور مزید پابندیاں عائد کرنے کا بھی مطالبہ کیا ہے۔ ترقی یافتہ جی سیون گروپ میں برطانیہ، کینیڈا، فرانس، جرمنی، اٹلی، جاپان اور امریکہ شامل ہیں۔ امریکہ یوکرین کو زمین سے فضا میں مار کرنے والا جدید راکٹ سسٹم فراہم کرنے کا بھی ارادہ رکھتا ہے۔

افغان زلزلہ متاثرین کو فوری مالی امداد کی ضرورت ہے، امدادی ایجنسی

ایک افغان امدادی ایجنسی نے زلزلہ متاثرین کے لیے نقد مالی امداد کی اپیل کی ہے۔ اس ایجنسی کے مطابق ان کے پاس خوراک ذخیرہ کرنے کے لیے ٹینٹ اور مناسب جگہیں موجود نہیں ہیں لہذا متاثرین کو نقد رقم فراہم کی جائے۔ افغانستان میں آنے والا حالیہ زلزلہ اس خطے کا گزشتہ کئی دہائیوں کا تباہ کن زلزلہ تھا، جس کے نتیجے میں ایک ہزار سے زائد افراد ہلاک دس ہزار سے زائد مکانات منہدم ہو گئے تھے۔ ہلاک ہونے والوں میں 155 بچے بھی شامل ہیں جبکہ دور افتادہ دیہات تک امداد پہنچانا ایک مشکل امر ہے۔

روس نے 43 کینیڈین شہریوں پر پابندی عائد کر دی

روس نے کینیڈا کی طرف سے عائد کردہ پابندیوں کا سخت جواب دیتے ہوئے 43 کینیڈین شہریوں کی ملک داخلے پر پابندی عائد کر دی ہے۔ روسی وزارت خارجہ کی طرف سے جاری کی گئی فہرست میں کینیڈا کی برسر اقتدار لبرل پارٹی کی چیئرپرسن سوزان کوون کے ساتھ ساتھ بینک آف انگلینڈ اور بینک آف کینیڈا کے سابق گورنر مارک کارنی بھی شامل ہیں۔ اپریل میں بھی روس نے 61 کینیڈین حکام اور صحافیوں پر پابندیاں عائد کی تھیں۔ اسی طرح روس کئی مغربی تاجروں اور سیاست دانوں پر بھی ملک میں داخل ہونے پر پابندی عائد کر چکا ہے۔

کیمرون، حملے میں کم از کم 26 افراد ہلاک

افریقی ملک کیمرون کے جنوب مغربی علاقے اکوایا میں ہونے والے ایک حملے کے نتیجے میں کم از کم 26 دیہاتی مارے گئے ہیں۔ مقامی حکام کے مطابق متعدد افراد لاپتہ ہیں اور ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ہے۔ ابھی تک یہ واضح نہیں ہے کہ یہ حملہ کس گروہ کی طرف سے کیا گیا تھا۔ کیمرون کا جنوب مغربی علاقہ زمین کی ملکیت کے حوالے سے پہلے ہی نسلی تنازعات کا شکار ہے لیکن اب وہاں علیحدگی پسند تحریک بھی شروع ہو چکی ہے۔ یہ علاقہ نائیجیریا کی سرحد سے ملحق ہے۔

سعودی عرب سفارتی مذاکرات کی بحالی چاہتا ہے، ایران

ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان سعید خطیب زادے کے مطابق سعودی عرب تہران کے ساتھ سفارتی مذاکرات کی بحالی کا خواہش مند ہے۔ ایرانی وزارت خارجہ کا یہ بیان ایک ایسے وقت میں سامنے آیا ہے، جب ایک روز پہلے ہی عراقی وزیراعظم نے تہران کے دورے میں ان دونوں حریف ممالک کے مابین مذاکرات کی بحالی پر زور دیا تھا۔ سنی ملک سعودی عرب اور شیعہ ملک ایران کے مابین سن دو ہزار سولہ میں سفارتی تعلقات منقطع ہو گئے تھے۔ مشرق وسطیٰ میں اثر و رسوخ بڑھانے کے لیے یہ دونوں ملک اپنی اپنی جنگ جاری رکھے ہوئے ہیں۔ گزشتہ ایک برس کے دوران ان دونوں ملکوں کے مابین مذاکرات کے پانچ خفیہ دور ہو چکے ہیں۔

یوکرین کے حوالے سے مغرب کا اتحاد ضروری ہے، امریکی صدر

امریکی صدر جو بائیڈن نے جی سیون رہنماؤں سے کہا ہے کہ یوکرین پر روس کے حملے کے جواب میں مغرب کو متحد رہنا چاہیے۔ جی سیون سربراہی اجلاس کے میزبان جرمن چانسلر اولاف شولس کے سامنے امریکی صدر نے کہا کہ یورپ کو مزید اتحاد کا مظاہرہ کرنا ہو گا۔ جو بائیڈن کے مطابق روسی صدر کو امید ہے کہ جی سیون اور نیٹو اتحاد کے مابین تقسیم پیدا ہو جائے گی۔ دوسری جانب جرمن چانسلر نے کہا کہ روسی صدر کو مغرب کے اس قدر متحد ہو جانے کی توقع نہیں تھی۔ یوکرینی صدر وولودیمر زیلینسکی بھی آج جی سیون اجلاس سے ویڈیو لنک کے ذریعے خطاب کریں گے۔

یوکرین جنگ کے آغاز کے بعد روسی صدر کا پہلا بیرونی دورہ

یوکرین پر حملے کے بعد روسی صدر ولادیمیر پوٹن پہلی مرتبہ دو بیرونی ممالک کا دورہ کر رہے ہیں۔ روسی سرکاری ٹیلی وژن کے مطابق صدر پوٹن رواں ہفتے تاجکستان اور ترکمانستان کا دورہ کریں گے۔ روسی صدر مغربی پابندیوں کے بعد نئے تجارتی پارٹنرز کی تلاش میں ہیں اور اسی وجہ سے وہ جلد ہی انڈونیشیا کے صدر جوکو ویدودو سے بھی ملاقات کرنے والے ہیں۔ صدر پوٹن جون میں بیلا روس کا دورہ بھی کریں گے۔ روسی صدر پہلے ہی چین اور بھارت کے ساتھ اپنے تجارتی تعلقات میں اضافے کے لیے سرگرم ہیں۔

بھنگ کے استعمال میں تیزی سے اضافہ، اقوام متحدہ

اقوام متحدہ کی ایک تازہ رپورٹ کے مطابق جن ممالک نے بھنگ کو قانونی حیثیت دی ہے، وہاں اس کے باقاعدہ استعمال میں اضافہ ہوا ہے۔ رپورٹ کے مطابق ایسا لگتا ہے کہ بھنگ کو قانونی حیثیت دینے سے اس منشیات کے روزانہ استعمال میں اضافے کے رجحانات میں تیزی آئی ہے۔ اسی طرح کورونا وبا اور اس کے نتیجے میں لگنے والے لاک ڈاؤنز میں بھی اس منشیات کے استعمال میں اضافہ دیکھا گیا ہے۔ بھنگ کے بڑھتے ہوئے استعمال سے صحت کی سہولیات اور ہسپتالوں پر بوجھ بڑھ رہا ہے۔ رپورٹ کے مطابق 2020ء میں تقریباً 284 ملین افراد یا دنیا کی 5.6 فیصد آبادی نے کسی نہ کسی نشہ آور دوا کا استعمال کیا جبکہ ان میں سے 209 ملین افراد نے بھنگ کا استعمال کیا۔

تحفظ ماحول کانفرنس سے متعلق کوئی پیش رفت نہیں ہوئی، اقوام متحدہ

حیاتیاتی تنوع پر اقوام متحدہ کی عالمی ماحولیاتی کانفرنس کی تیاری کے لیے عبوری مذاکرات بغیر کسی پیش رفت کے اختتام پذیر ہو گئے ہیں۔ تحفظ ماحول کے کارکنوں نے اس صورتحال کو ’تباہ کن جمود‘ قرار دیا ہے۔ 196 شریک ممالک کے مندوبین تقریباً ایک ہفتے سے نیروبی میں تحفظ ماحول کے معاہدے کے مسودے پر کام کر رہے تھے۔ یہ مسودہ دسمبر میں کینیڈا میں ہونے والی عالمی ماحولیاتی کانفرنس COP15 کے موقع پر حتمی منظوری کے لیے پیش کیا جانا ہے۔ ابھی تک یہ واضح نہیں ہے کہ تب تک کوئی ایسا مسودہ تیار کیا جا سکے گا، جس پر سبھی ممالک متفق ہوں۔

جنوبی افریقہ کے نائٹ کلب میں پُراسرار طور پر کم از کم 20 افراد ہلاک

جنوبی افریقہ کے ایک نائٹ کلب میں پیش آنے والے ایک پراسرار واقعے کے نتیجے میں کم از کم 20 افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔ ہلاک ہونے والے نوجوانوں کی عمریں 18 سے 20 سال کے درمیان ہیں اور یہ جنوبی افریقہ کے ایسٹ لندن نامی علاقے کے ایک نائٹ کلب میں شراب پی رہے تھے۔ یہ وہ نوجوان تھے، جو ہائی اسکول کے اختتام پر جشن منا رہے تھے۔ حکام اس بات کا تعین کرنے کی کوشش کر رہے ہیں کہ آیا ان کی موت کسی قسم کے زہر سے ہوئی ہے۔

ویڈیو دیکھیے 04:36
ویڈیو دیکھیے 01:54
آڈیو سنیے 04:00
اشتہار

ڈی ڈبلیو پکچر گیلری

ڈی ڈبلیو ویڈیو