صوبہ سندھ کے ڈيڑھ سو سے زائد لاپتہ سياسی کارکن کہاں ہيں؟ | تمام میڈیا مواد | DW | 10.07.2018
  1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

ڈی ڈبلیو ویڈیو

صوبہ سندھ کے ڈيڑھ سو سے زائد لاپتہ سياسی کارکن کہاں ہيں؟

صوبہ سندھ میں گمشدہ افراد کے حقوق کے ليے سرگرم تنظیم ’وائس فار مسنگ پرسنز آف سندھ‘ کے مطابق اس وقت ڈیڑھ سو سے زائد سیاسی اور قوم پرست کارکن لاپتہ ہیں۔ سندھ کے شہر نصیر آباد کے ایک پرائمری اسکول کے ہیڈ ماسٹر ہدایت اللہ لوہار کو بھی گزشتہ سال اپریل میں اغوا کر ليا گیا تھا۔ ان کی صاحب زادی سسعی لوہار اپنے والد کو بازیاب کرانے کے لیے ہر ممکن کوشش کر رہی ہيں۔ تفصیلات جانيے عرفان آفتاب کی اس رپورٹ میں۔

ویڈیو دیکھیے 03:39
Now live
03:39 منٹ