سزائے قید کے حکم کے دو روز بعد سلمان خان کی ضمانت منظور | فن و ثقافت | DW | 07.04.2018
  1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages
اشتہار

فن و ثقافت

سزائے قید کے حکم کے دو روز بعد سلمان خان کی ضمانت منظور

بالی وُڈ سپر سٹار سلمان خان کو بقا کے خطرے سے دوچار ایک کالے ہرن کے غیر قانونی شکار کے باعث پانچ سال قید کا حکم سنائے جانے کے دو روز بعد ایک بھارتی عدالت نے ان کی ضمانت منظور کر لی۔ انہیں آج ہی رہا کر دیا جائے گا۔

بھارت کے تجارتی دارالحکومت اور بالی وُد کہلانے والی بھارتی فلمی صنعت کے مرکز ممبئی سے ہفتہ سات اپریل کو موصولہ نیوز ایجنسی روئٹرز کی رپورٹوں کے مطابق انڈیا کے اس انتہائی مقبول مسلمان اداکار کے کروڑوں مداح اس وقت شدید دھچکے میں آ گئے تھے، جب جمعرات پانچ اپریل کو ایک ملکی عدالت کی طرف سے انہیں پانچ سال قید کی سزا سنا دی گئی تھی۔

بھارتی سپر اسٹار سلمان خان مجرم قرار، پانچ برس قید کی سزا

سلمان خان کی سزا اور سوشل میڈیا پر دلچسپ تبصرے

سلمان خان کے خلاف اس عدالتی فیصلے کے فوراﹰ بعد انہیں جیل منتقل کر دیا گیا تھا۔ لیکن انہیں جیل گئے ہوئے ابھی دو دن ہی گزرے تھے کہ ایک عدالت نے ان کی طرف سے دائر کی گئی ضمانت کی درخواست منظور کر لی۔ بالی وُڈ کے اس سپر سٹار کے وکیل مہیش بورا نے صحافیوں کو بتایا، ’’سلمان خان کی ضمانت منطور کر لی گئی ہے اور ضروری قانونی کارروائی کی تکمیل کے بعد انہیں آج ہی، سات اپریل ہفتے کی شام تک رہا کر دیا جائے گا۔‘‘

Indien Mitglieder der Bishnoi-Gemeinschaft

راجسھتان میں جودھ پور کی ایک عدالت کی طرف سے ضمانت کی منظوری کے بعد خوشیاں مناتے سلمان خان کے مداح

روئٹرز کے مطابق سلمان خان کی ضمانت کی خبر ملتے ہی ان کی بہت سے مداحوں نے ممبئی میں ان کے گھر کے باہر اور جودھ پور میں ان کی ضمانت منظور کرنے والی عدالت کے باہر خوشی سے آتش بازی بھی کی۔ خان کو یہ سزا شمال مغربی بھارتی ریاست راجستھان کی ایک عدالت نے سنائی تھی اور ان کی ضمانت بھی اسی بھارتی ریاست کے شہر جودھ پور کی ایک عدالت نے منظور کی۔

تامل ناڈو کا وزیر اعلیٰ بننا چاہتا ہوں، کمل ہاسن

’پدماوت‘ کے بعد کنگنا رناؤت کی فلم بھی انتہا پسندوں کے نشانے پر

سلمان خان کی عمر اس وقت 52 برس ہے اور ان کے خلاف سزائے قید کا عدالتی فیصلہ ایک ایسی قانونی جنگ کے بعد سنایا گیا تھا، جو دو عشروں تک جاری رہی تھی۔ ان پر الزام تھا کہ وہ کالے ہرنوں کی ایک خاص قسم، جو معدوم ہو جانے کے خطرے کا شکار ہے، سے تعلق رکھنے والے ایک ہرن کے شکار کے مرتکب ہوئے تھے، جو جنگلی حیات کے بھارتی قوانین کے سراسر منافی تھا۔

اس مقدمے میں مدعی راجستھان میں اس بشنوئی برادری کے چند سرکردہ رہنما تھے، جو ہرنوں کا بڑا احترام کرتی ہے۔ اس برادری نے اس بھارتی اداکار کے خلاف مقدمے کی قریب 20 سال تک پیروی کی تھی۔

’گل مکئی‘ ملالہ کی زندگی پر مبنی بھارتی فلم

بالی وڈ کی سنٹنٹ کوئن، بے خوف نادیہ

نیوز ایجنسی اے پی کے مطابق سلمان خان کی ضمانت کی درخواست کی سماعت کے دوران ان کی بہنیں الویرا اور ارپیتا بھی عدالت میں موجود تھیں اور جودھ پور کی عدالت کے جج راوندر کمار جوشی نے انہیں 50 ہزار روپے کی ضمانت پر رہا کرنے کا حکم دیا۔

سلمان خان کی طرف سے مہیش بورا نے ان کو سنائی جانے والی سزا کے خلاف اپیل کر رکھی ہے اور جب تک اس اپیل پر کوئی فیصلہ نہیں ہوتا، بالی وُڈ کے یہ ہر دلعزیز اداکار ضمانت پر جیل سے باہر ہی رہیں گے۔

ویڈیو دیکھیے 00:33

سپر اسٹار کو پانچ برس قید کی سزا

م م / ع ب / روئٹرز، اے پی

DW.COM

Audios and videos on the topic