سابق پاکستانی وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی بھی گرفتار | حالات حاضرہ | DW | 18.07.2019
  1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages
اشتہار

حالات حاضرہ

سابق پاکستانی وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی بھی گرفتار

پاکستان کے قومی احتساب بیورو نے ایک اور سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کو بھی حراست میں لے لیا ہے۔ نیب نے گرفتاری کے حوالے سے تفصیلات نہیں بتائیں۔

احتساب کے ملکی ادارے نیب کے ترجمان نے ان کی گرفتاری کی تصدیق کی، لیکن اس ضمن میں مزید تفصیلات نہیں بتائیں۔

پاکستانی میڈیا کی رپورٹوں کے مطابق عباسی کو آج جمعرات 18 جولائی کو اسلام آباد میں نیب کے دفتر میں ایل این جی کی درآمد سے متعلق تفتیش کے لیے طلب کیا گیا تھا۔ تاہم وہ نیب میں پیش نہیں ہوئے۔ انہیں لاہور کے قریب ایک ٹول پلازا پر روک کر گرفتار کیا گیا۔

شاہد خاقان عباسی کی گرفتاری کی خبر سامنے آنے کے بعد سوشل میڈیا پر بھی انہی سے متعلق ہیش ٹیگ ٹرینڈ کر رہا ہے۔ اپوزیشن جماعتوں سے تعلق رکھنے والے افراد ان کی گرفتاری کی مذمت کر رہے ہیں جب کہ حکمران جماعت کے حامی اس عمل کی تعریف میں ٹوئیٹس کر رہے ہیں۔

عباسی پاکستان مسلم لیگ نون کے رہنما نواز شریف کو وزارت عظمیٰ کے منصب کے لیے نااہل قرار دیے جانے کے بعد وزیر ملکی اعظم بنے تھے۔ سابق وزیر اعظم نواز شریف بھی جیل میں ہیں اور ان کی جماعت سے تعلق رکھنے والے کئی اہم سابق وزراء بھی مخلتف مقدمات میں گرفتار ہیں۔

ویڈیو دیکھیے 01:04

جب نواز شریف کو سنائی گئی سزا کا اعلان ہوا

DW.COM

Audios and videos on the topic