’خمینی کے پوتے کو الیکشن لڑنے سے روک دیا گیا‘ | حالات حاضرہ | DW | 26.01.2016
  1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

’خمینی کے پوتے کو الیکشن لڑنے سے روک دیا گیا‘

ایرانی انقلاب کے رہنما اور اسلامی جمہوریہ ایران کے بانی آیت اللہ خمینی کے پوتے کو اگلے ماہ ہونے والے ملکی شوریٰ نگہبان کے انتخابات سے باہر کر دیا گیا ہے۔

حسن خمینی گزشتہ کچھ عرصے سے شوریٰ نگہبان کے انتخابات میں شرکت کے لیے اپنی مہم جاری رکھے ہوئے تھے، تاہم ان کے اہل خانہ نے بتایا کہ انہیں انتخابات میں حصہ لینے سے روک دیا گیا ہے۔

اپنے انساگرام اکاؤنٹ پر حسن خمینی کے بیٹے نے لکھا کہ ان کے 43 سالہ والد کو ان انتخابات میں شرکت سے یہ کہہ کر روک دیا گیا ہے کہ ان کی ’مذہبی سمجھ بوجھ‘ مجلسِ نگہبان کی رکنیت کے لیے ناکافی ہے۔

اصلاح پسندوں کے ساتھ قریبی مراسم رکھنے والے حسن خمینی کے بیٹے نے بتایا کہ اس سلسلے میں درجنوں مذہبی رہنماؤں کی جانب سے حسن خمینی کے حق میں رائے دی گئی، تاہم اس کے باوجود ان کے والد کو ان انتخابات میں شرکت کی اجازت نہیں دی گئی۔

حسن خمینی کو امید تھی کہ وہ مذہبی رہنماؤں کی اس طاقتور شوریٰ کی رکنیت حاصل کر لیں گے۔ یہ بات اہم ہے کہ یہی مجلسِ شوریٰ ایران میں سپریم لیڈر کا انتخاب کرتی ہے اور ممکنہ طور پر اگلے انتخابات کے نتیجے میں وجود میں آنے والی شوریٰ ہی کو موجود سپریم لیڈر آیت اللہ علی خامنہ ای کے جانشیں کا تقرر کرنا ہے۔ خامنہ ای نے انقلابی رہنما آیت اللہ خمینی کے سن 1989ء میں انتقال کے بعد سپریم لیڈر کا عہدہ سنبھالا تھا اور اب ان کی عمر 76 سال ہے۔

Hassan Khomeini und Hashemi Rafsanjani Iran

حسن خمینی اصلاح پسندوں کے قریب خیال کیے جاتے ہیں

فروری کی 26 تاریخ کو ایران میں شوریٰ نگہان کے علاوہ پارلیمانی انتخابات بھی منعقد ہو رہے ہیں، جن میں شوریٰ نگہبان کے 88 اور پارلیمان کے 290 قانون سازوں کا انتخاب عمل میں آئے گا۔

شوریٰ نگہبان کی رکنیت کے لیے آٹھ سو امیدوار میدان میں ہیں، تاہم ان تمام امیدواروں کو انتخاب میں حصہ لینے سے قبل موجودہ شوریٰ نگہبان سے توثیق کی ضرورت ہے۔

شوریٰ نگہبان کے توثیقی بازو کی جانب سے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ مسترد کیے جانے والے امیدواران ہفتے کے روز تک اپیل کا حق رکھتے ہیں۔ بتایا گیا ہے کہ امیدواروں میں سے 166 کی توثیق کر دی گئی ہے، 111 کو مسترد کیا گیا ہے، 207 کو نااہل قرار دیا گیا ہے، جب کہ 58 نے اپنے کاغذات نامزدگی واپس لے لیے ہیں۔

یہ بات اہم ہے کہ اگر حسن خمینی شوریٰ نگہبان کے رکن منتخب ہو جاتے، تو وہ آیت اللہ خمینی کے خاندان کے پہلے فرد ہوتے، جو کسی اہم عہدے پر فائز ہوتے۔