جرمنی: والدین نومولود بچے کو ٹیکسی میں ہی بھول گئے | معاشرہ | DW | 21.05.2019
  1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages
اشتہار

معاشرہ

جرمنی: والدین نومولود بچے کو ٹیکسی میں ہی بھول گئے

جرمن شہر ہیمبرگ میں والدین بچے کی پیدائش کے بعد اُسے ہسپتال سے واپس اپنے گھر لا رہے تھے لیکن جب وہ ٹیکسی سے اُترے تو بچے کو ساتھ لینا ہی بھول گئے۔ بعد ازاں ڈرائیور نے بھی گاڑی ایک زیر زمین پارکنگ میں جا کر کھڑی کر دی۔

پولیس کے مطابق جرمن شہر ہیمبرگ میں یہ حیران کن واقعہ پیر 20 مئی کو پیش آیا، جب والدین اپنا سب سے قیمتی ’سامان‘ ٹیکسی میں ہی بھول گئے۔ بتایا گیا ہے کہ والدین چند روز پہلے پیدا ہونے والے اپنے بچے کو ہسپتال سے گھر لا رہے تھے لیکن اسے ٹیکسی سے اپنے ساتھ لینا بھول گئے۔

جس وقت والدین کو یہ احساس ہوا کہ غلطی سے ان کا بچہ ٹیکسی میں ہی رہ گیا ہے تو والد ٹیکسی کے پیچھے بھاگا اور اس نے ڈرائیور کو زور زور سے آوازیں بھی دیں لیکن اس وقت تک ٹیکسی والا کچھ جا چکا تھا۔ اس کے بعد والدین نے ٹیکسی سروس فراہم کرنے والوں کو کال کی لیکن وہ بھی مطلوبہ ٹیکسی کو تلاش کرنے میں ناکام رہے۔

دوسری جانب ٹیکسی ڈرائیور بھی اس سے آگاہ نہیں تھا کہ کار کی پیچھے والی سیٹ پر  کیا رکھا ہوا ہے اور اس نے اپنی کار ایک زیر زمین پارکنگ میں کھڑی کی اور خود وہ لنچ بریک پر چلا گیا۔ اس کے بعد ٹیکسی ڈرائیور اپنے نئے مسافر کو لینے کے لیے ایئرپورٹ پر گیا۔ جب نیا مسافر ٹیکسی میں بیٹھا تو اس نے دیکھا کہ ایک نومولود بچہ گاڑی میں رکھا ہوا ہے۔

اس کے فوراﹰ بعد مقامی پولیس کو کال کی گئی جبکہ کسی ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کے لیے ایمبولینس کو بھی وہاں بلوا لیا گیا۔ بچے کا چیک اپ کرنے کے بعد اسے والدین کے حوالے کر دیا گیا۔ ان والدین کی ایک بارہ ماہ کی بچی بھی ہے، جو ان کے ساتھ ہی تھی۔ والدین نے وہاں موجود تمام افراد کا شکریہ ادا کیا۔

ا ا / ع ا (ڈی پی اے)

ملتے جلتے مندرجات