جرمنی: تین سیاسی جماعتوں کے سربراہان کی صدر سے ملاقات | حالات حاضرہ | DW | 01.12.2017
  1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

جرمنی: تین سیاسی جماعتوں کے سربراہان کی صدر سے ملاقات

گزشتہ شب جرمن صدر فرانک والٹر شٹائن مائر نے کرسچن ڈیموکریٹک یونین، کرسچن سوشل یونین اور سوشل ڈیموکریٹک پارٹی کے سربراہان سے ملاقات کی۔ اس دوران حکومت سازی کے موضوع پر تبادلہء خیال کیا گیا۔ کیا یہ ملاقات کامیاب رہی؟

 جرمنی میں نئی حکومت کب تشکیل پائے گی؟ یہ وہ سوال ہے، جس کا جواب تین بڑی جماعتوں کی سربراہان کی صدر کی سرکاری رہائش گاہ ’بَیلے وُو پیلس‘ میں ہونے والی ملاقات کے بعد بھی فی الحال سامنے نہیں آ سکا۔ صدر فرانک والٹر شٹائن مائر کی دعوت پر چانسلر انگیلا میرکل، ہورسٹ زیہوفر اور مارٹن شُلس تین گھنٹوں تک ممکنہ اتحاد کے موضوع پر تبادلہء خیال کرتے رہے۔ ذرائع ابلاغ کو اس دوران ہونے والی پیش رفت سے آگاہ نہیں کیا اور  توقع کے عین مطابق کوئی اعلامیہ بھی جاری نہیں کیا گیا۔

ستمبر کے انتخابات کے بعد حکومت بنانے کے لیے چانسلر میرکل کی سی ڈی یو، ان کی ہم خیال جماعت سی ایس یو، ایف ڈی پی اور گرینز کے مابین مذاکرات ناکام ہو چکے ہیں۔ سوشل ڈیموکریٹس کے ساتھ بات چیت کا اونٹ کس کروٹ بیٹھے گا یہ کہنا ابھی قبل از وقت ہے۔ انتخابات کے فوری بعد ایس پی ڈی نے حکومت کا حصہ نہ بننے کا اعلان کیا تھا۔ تاہم  صدر کی درخواست کے بعد اس جماعت نے بات چیت میں شامل ہونے کا فیصلہ کیا۔

جمعرات کی شب ہونے والی اس ملاقات کے بعد آج جمعے کو ان تینوں جماعتوں کی کمیٹیوں کے اجلاس بھی ہو رہے ہیں، جن میں پہلی ملاقات کے نتائج پر تبادلہ خیال کیا جائے گا۔ اس کے بعد ہی عوام کو تفصیلات فراہم کی جائیں گی۔ یہ بھی ابھی غیر واضح ہے کہ کیا کرسمس کی چھٹیوں سے قبل ان تینوں جماعتوں کے مابین حکومت سازی کے لیے مذاکرات کا پہلا باقاعدہ دور شروع بھی ہو سکے گا۔

 

ویڈیو دیکھیے 04:09
Now live
04:09 منٹ

جرمنی میں حکومت سازی کی کوشش، کیا امکانات ہیں؟

Audios and videos on the topic

اشتہار