’ایف بی آئی سربراہ الیکشن پر اثرانداز ہونا چاہتے ہیں‘ | حالات حاضرہ | DW | 31.10.2016
  1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

’ایف بی آئی سربراہ الیکشن پر اثرانداز ہونا چاہتے ہیں‘

امریکی سیاسی جماعت ڈیموکریٹک پارٹی کے اعلیٰ رہنما ہیری ریڈ نے ایف بی آئی کے سربراہ پر کلنٹن کی ای میلز کی دوبارہ پڑتال پر تنقید کی ہے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ ایف بی آئی کے سربراہ دوہرے معیار کے حامل ہیں۔

Bildkombo James Comey und Hillary Clinton (Getty Images/AFP/Y. Gripas/J. Sullivan)

ہیلری کلنٹن اور ایف بی آئی کے سربراہ جیمز کومی

امریکی سینیٹ کے رکن اور سینیئر امریکی سیاستدان ہیری ریڈ کا کہنا ہے کہ ایسا دکھائی دیتا ہے کہ کلنٹن کی ای میلز کا معاملہ اچھال کر خفیہ ایجنسی ایف بی آئی کے سربراہ جیمز کومی نے امکاناً قانون شکنی کی ہے اور اس سے یہ تاثر ابھرا ہے کہ وہ صدارتی الیکشن پر اثرانداز ہونے کی کوشش کر رہے ہیں۔

ریڈ کا یہ بھی کہنا تھا کہ کومی نے موجودہ صورت حال میں دوہرا معیار اپنا رکھا ہے، ایک طرف وہ ہیلری کلنٹن کی ای میلز کی دوبارہ چھان بین کر رہے ہیں تو دوسری جانب ٹرمپ کے روس کے ساتھ رابطوں کے معلومات پر انہوں نے کوئی ایکشن نہیں لیا تھا۔

ہیری ریڈ امریکی سینیٹ میں اقلیتی پارٹی (ڈیموکریٹک پارٹی) کے لیڈر ہیں۔ انہوں نے اپنے بیان میں کہا کہ حالیہ مہینوں کے دوران کومی کا حساس معاملات کے حوالے سے مجموعی رویہ نامناسب قرار دیا جا سکتا ہے۔

USA Mehrheitsführer Senat Harry Reid (AP)

امریکی سینیٹر ہیری ریڈ

ہیری ریڈ نے یہ تمام باتیں جیمز کومی کے نامی لکھے گئے خط میں بھی تحریر کی ہیں۔ ہیری ریڈ نے ایف بی آئی کے ڈائریکٹر کو خط میں تحریر کیا کہ اُن کے دفتر  کے جائزے کے مطابق اُن کی موجودہ کارروائی امریکی دستور کے ’ہیچ ایکٹ‘ کے منافی ہو سکتی ہے۔ یہ قانون ایف بی آئی کے حکام کو الیکشن پر اثرانداز ہونے کے عمل سے روکتا ہے۔

ہیری ریڈ نے واضح کیا کہ ہیلری کلنٹن کی نئی ای میلز میں بھی کوئی ایسا مواد دستیاب نہیں، جو پہلے پڑتال کی گئی ای میلز سے ہٹ کر ہو اور ان میں کوئی بھی حساس معاملہ شامل نہیں، جو امریکی مفادات کے لیے نقصان دہ ہو۔ ریڈ کے مطابق ری پبلکن پارٹی کے امیدوار ڈونلڈ ٹرمپ کے روس کے ساتھ تعلقات کے افشاء پر کوئی کارروائی نہیں کی گئی حالانہ روس کا امریکا کے ساتھ رویہ جارحانہ ہے۔

امریکی سینیٹ کے اہلکار نے کہا کہ ہیلری کلنٹن کی ای میلز کو عام کرنے سے امریکا کو کوئی نقصان پہنچنے کا خطرہ نہیں جب کہ ایف بی آئی کے ڈائریکٹر کا اصرار ہے کہ وہ نازک معلومات کے تناظر میں ای میلز پر امریکی عوام کو باخبر رکھیں گے۔ یہ امر اہم ہے کہ رواں برس ستمبر میں ڈیموکریٹک پارٹی نے ملکی خفیہ ایجنسی ایف بی آئی کو ایک خط تحریر کیا تھا کہ وہ اس کا تعین کرے کہ روس رواں برس کے صدارتی انتخابات کو متاثر کرنے کی کوشش تو نہیں کر رہا۔

اشتہار