امریکی ریاستوں میں پرندوں کے لیے جزائر تعمیر کرنے کی پلاننگ | سائنس اور ماحول | DW | 15.11.2019
  1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages
اشتہار

سائنس اور ماحول

امریکی ریاستوں میں پرندوں کے لیے جزائر تعمیر کرنے کی پلاننگ

چند امریکی ریاستوں نے ناپید ہوتے مختلف پرندوں کو انسانی ساختہ جزائر میں منتقل کرنے کی منصوبہ بندی شروع کر دی ہے۔ انسانی کوششوں سے یہ جزائر ریاستی ساحلی علاقوں کے قریبی سمندر میں بنائے جائیں گے۔

امریکی ریاست ورجینیا میں ایک اسٹرٹیجیک نامی ایک جنوبی جزیرہ ہے، جو پرندوں کی نشو نما اور افزائش کے لیے ایک بہترین ماحول فراہم کرتا ہے۔ اس جزیرے پر بظاہر چھوٹے پرندوں کو کھانے والے جانور بھی بہت بڑی تعداد میں موجود نہیں ہیں۔ اس باعث چھوٹے بڑے پرندوں کو انڈے دینے اور بچے پیدا کرنے میں کسی مشکل کا سامنا نہیں ہوتا۔ حتٰی کہ  یہاں سے گزرنے والی ٹریفک سے بھی وہ پرشان نہیں ہوتے۔

اس جنوبی جزیرے کو امریکی ریاست ورجینیا کی پرندوں کی کالونی سے تعبیر کیا جاتا ہے۔ اس چھوٹے سے جزیرے پر سولہ ہزار سے بیس ہزار مختلف پرندے آباد ہیں۔ بعض اوقات انڈوں سے نکلنے والے بچوں سمیت یہ تعداد پچیس ہزار تک پہنچ جاتی ہے۔ موسم سرما میں یہاں سے ہزاروں پرندے وسطی اور جنوبی امریکا کی جانب نقل مکانی کر جاتے ہیں۔

Dreizehenmöwe, Dreizehen-Möwe, Rissa tridactyla, Larus tridactyla, black-legged kittiwake (picture-alliance/blickwinkel/P. Frischknecht)

ورجینیا کا جنوبی جزیرہ پرندوں کو قدرتی ماحول فراہم کرتا ہے

مقامی لوگوں کا خیال ہے کہ عموماً اس جزیرے سے جانے والے پرندے لوٹ کر نہیں آتے اور نہ ہی ان کی منزل کا حتمی تعین ہو سکا ہے۔ اندازوں سے ہی معلوم ہوتا ہے کہ وہ جنوبی اور وسطی امریکا کی جانب نئی بستیاں بسانے چلے جاتے ہیں۔ بعض لوگوں کا خیال ہے کہ ان پرندوں کی جنوبی جزیرے سے جانے کی وجہ ٹریفک کا بڑھتا شور بھی ہو سکتا ہے۔

ماحول دوستوں کا کہنا ہے کہ جنوبی جزیرے سے گزرنے والی بڑی سڑک پرندوں کے گھونسلوں کے بہت قریب تعمیر کی گئی ہے اور یہ پرندوں کے لیے مناسب نہیں ہے۔ عام اندازوں کے مطابق جنوبی جزیرے سے گزرنے والی سڑک پر سے مصروف اوقات میں روزانہ کی بنیاد پر ایک لاکھ ہر قسم کی گاڑیوں کا گزر ہوتا ہے۔ ان میں ٹرک، ٹرالر، موٹر کاریں اور بسیں شامل ہیں۔ ماحول دوستوں کا کہنا ہے کہ اتنی زیادہ ٹریفک کے شور کی وجہ سے بھی پرندے خود کو غیر محسوس کرنے لگے ہیں اور ان کا جزیرہ چھوڑنے کی اہم ترین وجوہات میں یہ شور بھی شامل ہے۔

Pelikan (picture-alliance/dpa/blickwinkel/McPHOTO/D. Moser)

پیلیکن پرندے کی نسل کو بھی خطران لاحق ہیں

ٹریفک کی وجہ سے حادثات بھی ہوئے ہیں کیونکہ ان سڑکوں پر کسی پرندے کے اچانک سامنے آنے پر فوری بریک لگانے سے یا تو گاڑی پھسل جاتی ہے یا  پھر پیچھے سے آنے و الی گاڑی ٹکرا جاتی ہے۔ ورجینیا ریاست میں محکمہٴ ٹرانسپورٹ نے پرندوں کے لیے ایک جزیرہ تعمیر کرنے کی تجویز پیش کر رکھی ہے۔

یہ امر اہم ہے کہ ایک اور امریکی ریاست شمالی کیرولینا گزشتہ کئی دہائیوں سے پرندوں کے لیے ایک خصوصی جزیرہ تعمیر کرنے کی کوشش میں ہے۔ اسی انداز میں ورجینیا کی ریاست بھی ایک ایسا ہی جزیرہ تیار کرنے کی پلاننگ کر رہی ہے۔ ماہرین کے مطابق اس کے لیے مخصوص بجٹ مختص کرنے کے ساتھ ساتھ ریتیلی زمین کا انتخاب بھی اہم ہے۔ اس جزیرے پر چٹانوں اور کیچڑ کا ہونا بھی ضروری ہے۔

USA Florida Everglades Nationalpark Ibis (Imago/Blickwinkel/J. Bitzer)

خمیدہ چونچ والا مڈغاسکری بگلا نما پرندہ

ایسے ہی جزائر تعمیر کرنے کی منصوبہ بندی جارجیا، فلوریڈا اور لُوئزیانہ کی ریاستوں نے بھی کر رکھی ہے۔ ایسی منصوبہ بندی کی جا رہی ہے کہ ان جزائر میں ایسے پرندوں کو رکھا جائے جنہیں افزائش میں مشکلات کا سامنا ہو چکا ہے۔ ان میں لمبے پروں اور جھلی دار پنجوں والے سمندری پرندے، پیلیکن، لمبی ٹانگوں والے بگلے، مچھلی خور بگلے اور پانی میں رہنے والے مڈغاسکری بگلا نما پرندے شامل ہیں۔

زانڈی ہاؤس مان (عابد حسین)

ویڈیو دیکھیے 03:03

افریقی پرندے ناپید ہونے کے خطرے سے دوچار

DW.COM

Audios and videos on the topic