آسٹریلیا میں دہشت گردی کے شبے میں ایک شخص گرفتار | حالات حاضرہ | DW | 28.11.2017
  1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

آسٹریلیا میں دہشت گردی کے شبے میں ایک شخص گرفتار

آسٹریلوی پولیس نے دہشت گردی کی منصوبہ بندی کے شبے میں ایک بیس سالہ مبینہ شخص کو گرفتار کر لیا ہے۔ بتایا گیا ہے کہ یہ شخص بڑے پیمانے پر لوگوں کو ہلاک کرنا چاہتا تھا۔

خبر رساں ادارے روئٹرز نے اٹھائیس نومبر بروز منگل بتایا ہے کہ آسٹریلوی پولیس نے میلبورن شہر سے ایک مشتبہ جنگجو کو گرفتار کر لیا ہے۔ پولیس کے مطابق یہ ملزم نئے سال کی آمد کے موقع پر وسیع پیمانے پر فائرنگ کا منصوبہ بنا رہا تھا۔

’دہشت گرد‘ نے آسٹریلیا سے مدد مانگ لی

آسٹریلیا میں مسافر طیارے پر حملے کا منصوبہ ناکام

’آسٹریلیا میں انتہا پسندی کے بیج کافی پہلے بوئے گئے‘

ویڈیو دیکھیے 03:31
Now live
03:31 منٹ

’فرانس یورپ میں دہشت گردی کا مرکز‘

میلبورن پولیس کے مطابق بیس سالہ صومالی نژاد آسٹریلوی ایک آٹو میٹک گن خریدنے کی کوشش میں تھا تاکہ میلبورن کے فیڈریشن اسکوائر پر شوٹنگ کر سکے۔ اس مقام پر سال نو کے موقع پر ہزاروں افراد جمع ہوتے ہیں۔ پولیس کے مطابق یہ زیادہ سے زیادہ افراد کو ہلاک کرنے کا منصوبہ رکھتا تھا۔

وکٹوریہ ریاست کےڈپٹی کمشنر پولیس شین پاٹن کی طرف سے بتایا گیا ہے کہ یہ شخص اکیلا ہی اس منصوبہ بندی میں تھا اور اس کی طرف سے آتشی اسلحہ خریدنے سے قبل ہی بروز پیر گرفتار کر لیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ اس صومالی نژاد شخص پر شبے کے بعد رواں برس کے اوائل سے ہی زیر نگرانی تھا۔

منگل کے دن میلبورن میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب میں انہوں نے مزید کہا کہ یہ ملزم ویب سائٹ کے ذریعے ایسے مواد تک رسائی حاصل کرنے کی کوشش میں بھی تھا کہ حملہ کیسے کیا جا سکتا ہے۔

شین پاٹن نے مزید کہا کہ پولیس کو شک ہے کہ یہ ملزم انتہا پسند گروہ داعش کا ہمدرد ہے۔ انہوں نے کہا کہ گرفتاری کے بعد اس مشتبہ شخص پر دہشت گردی کے الزامات کے تحت فرد جرم عائد کیا گیا ہے۔

مغربی ممالک میں ہونے والے حالیہ دہشت گردانہ حملوں کے باعث سکیورٹی ہائی الرٹ ہے۔ بالخصوص شام اور عراق میں داعش کی پسپائی کے باعث ایسے خدشات ہیں کہ وہاں فعال رہنے والے جنگجو اب دوسرے ممالک کا رخ بھی کر سکتے ہیں۔ اسی باعث یورپ کے علاوہ آسٹریلیا اور امریکا نے بھی خفیہ معلومات کے تبادلے میں رابطہ کاری کو زیادہ مؤثر بنا دیا ہے۔

DW.COM

Audios and videos on the topic

اشتہار