1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

معاشرہ

96 سالہ سابق جرمن چانسلر کو تمباکو نوشی کی اجازت مل گئی

جرمن ڈاکٹروں نے سابق چانسلر ہیلموٹ شمٹ کو سگریٹ نوشی کی اجازت دے دی ہے۔ چھیانوے سالہ اشمٹ کو ناسازیٴ طبعیت کی وجہ سے گزشتہ ماہ ہنگامی طور پر ایک ہسپتال بھی داخل کرایا گیا تھا۔

default

شمٹ چین اسموکر ہیں اور کہتے ہیں کہ وہ مرتے دم تک اس عادت کو ترک نہیں کریں گے

خبر رساں ادارے ڈی پی اے نے بتایا ہے کہ جرمن شہر ہیمبرگ میں ڈاکٹروں نے کہا ہے کہ چھیانوے سالہ سابق چانسلر ہیلموٹ شمٹ سگریٹ نوشی کر سکتے ہیں۔ شمٹ چین اسموکر ہیں اور کہتے ہیں کہ وہ مرتے دم تک اس عادت کو ترک نہیں کریں گے۔

تاہم حالیہ عرصے میں ان کی طبعیت کچھ خراب رہی، جس کے باعث ایسی توقع کی جا رہی تھی کہ ڈاکٹر انہیں سگریٹ نوشی ترک کرنے پر مجبور کر سکتے ہیں۔

شمٹ جرمنی میں سگریٹ کے حق میں چلائی جانے والی تحریک کی ایک اہم شخصیت ہیں۔ وہ تھیٹرز اور ٹیلی وژن پینل مذاکرات میں بھی کھلے عام سگریٹ نوشی کرتے رہے ہیں جبکہ پولیس ان کے اس عمل کو نظر انداز کر تی رہی ہے۔ یہ امر بھی اہم ہے کہ جرمنی میں بند مقامات پر سگریٹ نوشی پر پابندی عائد کی جا چکی ہے۔

شمٹ کے کارڈیالوجسٹ کارل ہائنز کُک نے جرمن روزنامے Bild کو بتایا، ’’وہ (شمٹ) اگر چاہیں تو سگریٹ نوشی کر سکتے ہیں۔ اس بات میں کوئی منطق نہیں کہ ایک چھیانوے برس کے شخص کو سگریٹ نوشی ترک کرنے پر مجبور کیا جائے۔‘‘

کارل ہائنز کُک نے مزید کہا، ’’مجھے واثق یقین ہے کہ جب وہ ہسپتال سے فارغ ہو کر گھر جائیں گے تو وہ دوبارہ تمباکو نوشی شروع کر دیں گے۔‘‘

شمٹ کو ہسپتال میں بھی نکوٹین دی گئی تاکہ انہیں اس نشے کی کمی کی وجہ سے کوئی مسئلہ نہ ہو۔