2015ء انٹرنیٹ پر سرگرم افراد اور بلاگرز کے لیے کیسا رہا | تمام میڈیا مواد | DW | 28.12.2015
  1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

معاشرہ

2015ء انٹرنیٹ پر سرگرم افراد اور بلاگرز کے لیے کیسا رہا

رواں برس کے دوران کم از کم اٹھارہ ایسے افراد کو قتل کیا گیا، جو انٹرنیٹ پر سرگرم تھے۔ ان میں بلاگرز اور سٹی جرنلسٹ شامل ہیں۔ رپورٹرز ود آؤٹ بارڈرز کے مطابق سب سے زیادہ ہلاکتیں شام اور بنگلہ دیش میں ہوئیں۔