1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

معاشرہ

یہ میری بیوی ہے۔۔۔ نہیں یہ انگیلا میرکل ہیں، ینکر

اگر موبائل فون کی گھنٹی بند نہ ہو اور کسی میٹنگ یا پریس کانفرنس کے دوران یہ بج اٹھے تو سبکی تو ہوتی ہی ہے۔ عمومی طور پر ایسے مواقع پر فون گھر سے ہی آیا ہوتا ہے لیکن ژاں کلود ینکر کو یہ فون ان کی بیوی نے نہیں کیا تھا۔

یورپی کمیشن کے صدر ژاں کلود ینکر برسلز میں سلوواکیہ کے وزیر اعظم رابرٹ فیکو کے ساتھ ایک پریس کانفرنس کر رہے تھے کہ اچانک ان کے فون کی گھنٹی بج اٹھی۔

اپنے جیب سے موبائل فون نکالتے ہوئے انہوں نے معذرت طلب لہجے میں کہا کہ یہ فون ان کی اہلیہ نے کیا ہو گا۔ انہوں نے اپنے موبائل فون کی گھنٹی بند کرنے کے لیے اسے اپنے کوٹ کی اندرونی جیب سے نکالا تو انہوں نے دیکھا کہ یہ فون ان کی اہلیہ نے نہیں کیا تھا۔

پریس کانفرنس کے لیے اسٹیج پر کھڑے باسٹھ سالہ ینکر نے تب مسکرا کر کہا کہ نہیں یہ تو جرمن چانسلر انگیلا میرکل کی کال تھی۔  

جب ینکر نے یہ کہا تو رابرٹ فیکو سمیت ہال میں موجود سبھی افراد ہنس پڑے۔ فون واپس جیب میں رکھتے انہوں فیکو کے ساتھ پریس کانفرنس شروع کی۔

لکسمبرگ کے سابق وزیر اعظم ژاں کلود ینکر اپنے غیر رسمی انداز کی وجہ سے مشہور ہیں۔

 

یورپی کمیشن کے صدر ژاں کلود ینکر نے گزشتہ ماہ ہی اعتراف کیا تھا کہ ان کے پاس اسمارٹ فون نہیں ہے۔ بتایا گیا ہے کہ ژاں کلود ینکر کے پاس نوکیا ماڈؒل کا ایک ایسا پرانا فون ہے، جس سے صرف کال سنی اور کی جا سکتی۔

ملتے جلتے مندرجات