1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

یونان کے لئے امدادی پیکیج پر معاہدہ ہو گیا

یورو زون کے ممالک مالیاتی بحران کے شکار یونان کی معاونت کے عمل میں IMF کی شراکت پر متفق ہو گئے ہیں۔ یونانی وزیر اعظم جارج پاپاندریو نے یورپی حکام کے اس فیصلے کو اطمینان بخش قرار دیا ہے۔

default

معاہدے کے لئے جرمن چانسلر انگیلا میرکل نے اہم کردار کیا

اس حوالے سے یونان کو 22 ارب یورو کی مالی معاونت فراہم کی جا سکتی ہے، جس کا اطلاق ایتھنز حکومت کی مالی صورت حال ابتر ہونے پر ہی ہوگا۔ فرانسیسی صدر نکولا سارکوزی کا کہنا ہے کہ یورو زون کے رکن ممالک مجموعی امدادی پیکیج کا دو تہائی فراہم کریں گے۔

یورپی یونین کا دو روزہ سربراہ اجلاس جمعرات سے برسلز میں شروع ہوا۔ یونان کا مالیاتی بحران اس اجلاس کے ایجنڈے پر نہیں تھا، تاہم یورپی کمیشن کے سربراہ یوزے مانویل باروسو نے پہلے ہی کہہ دیا تھا کہ اس موضوع سے بچنا مشکل ہوگا۔

بالآخر جمعرات کو یورو زون کے حکام کے درمیان یہ اتفاق رائے ہو ہی گیا کہ یونان کو بحران سے نکالنے کے لئے آئی ایم ایف کو بھی اس عمل میں شامل کیا جائے۔

اس اتفاق رائے کے لئے جرمن چانسلر انگیلا میرکل اور فرانسیسی صدر نکولا سارکوزی نے اہم کردار ادا کیا۔یورپی حکام کے مطابق یہ فیصلہ 16ممالک کی مشترکہ کرنسی یورو کے بہتر مستقبل کے تناظر میں کیا گیا ہے۔

NO FLASH EU-Gipfel

اجلاس کے موقع پر یورپی یونین کے رکن ممالک کے سربراہان حکومت

یورپی حکام ایتھنز حکومت کی مدد کے لئے عالمی مالیاتی ادارے IMF کے ممکنہ کردار پر تشویش بھی ظاہر کر چکے ہیں۔ یورپین سینٹرل بینک کے سربراہ ژاں کلاؤد تریشے کہہ چکے ہیں کہ اس عمل میں ’آئی ایم ایف‘ کی شراکت سے یورو زون کی ساکھ کو انتہائی نقصان پہنچے گا اور یورو کی قدر میں مزید کمی ہوگی۔

یہ پہلا موقع ہو گا، جب عالمی مالیاتی ادارہ آئی ایم ایف یورو زون کے مالیاتی امور میں شامل ہوگا۔ یورپی یونین کا یہ اجلاس جمعہ کو بھی جاری رہے گا۔

رپورٹ: ندیم گِل

ادارت: افسر اعوان

DW.COM