1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

یورپی یونین کی نئی ششماہی صدارت ہنگری کو منتقل

یورپی یونین کی ششماہی صدارت ہفتہ سے ہنگری کو منتقل ہو گئی ہے، جسے 2011ء کے پہلے حصے میں کئی مشکل معاملات کا سامنا ہو سکتا ہے۔ ان میں چند یورپی ملکوں کے اقتصادی مسائل کے بارے فیصلے اہم ہوں گے۔

default

اوربان یورپی کمیشن کے صدر کے ساتھ

پچاس سال قبل سابق سوویت یونین کی فوجوں کے خلاف ہنگری نے ایک خونی جنگ شروع کی تھی۔ بیس سال قبل دیوار برلن کے گرنے کے بعد مشرقی یورپی ملکوں کے دروازے ایک نئے عہد سے روشناس ہوئے۔ انہی ملکوں میں ایک ہنگری بھی تھا۔

آہنی پردوں کے ختم ہونےکے بعد سے ہنگری کے دروازے مغربی جمہوری اور اقتصادی رویوں سے آشنا ہوئے۔ اسی دوران ہنگری نے سن 2004 میں یورپی یونین میں شمولیت اختیار کی اور یکم جنوری سن 2011 کو ہنگری کی جدید تاریخ کا اہم دن قرار دیا جا سکتا ہے۔

Zeitungen Ungarn Budapest

ہنگری کو یورپی یونین کی رکنیت ملنے کے موقع پر شائع ہونے والے وہاں کے اخبارات

ہنگری کے وزیر اعظم وکٹر اوربان نے حال ہی یورپی یونین کے حکام سے ملاقات کے بعد کہا کہ ان کے ملک کے دور صدارت کے مہینوں میں یورپی یونین میں توسیع کو خاصی اہمیت حاصل رہے گی۔ وزیر اعظم کے نزدیک اس کے علاوہ مختلف ملکوں کی اندرونی سیاست کے یونین پر مرتب ہونے والے اثرات کا بھی جائزہ لیا جائے گا اور اصلاحاتی عمل کے ذریعے مختلف ملکوں کو درپیش اقتصادی مسائل کو کم کرنا بھی اہم ہو گا۔ وکٹر اوربان کا خیال ہے کہ یونین میں توسیع سے کئی ملکوں کے داخلی مسائل میں بہتری کے امکانات پیدا ہوں گے۔

ہنگری کے بعض حکام کا خیال ہے کہ وہ ششماہی دور صدارت کے دوران خاص طور پر کروشیا کے یونین میں شمولیت کے معاملے پر خاص طور پر توجہ مرکوز کریں گے۔ اس کے علاوہ انہوں نے اپنی مدت صدارت کے دوران یورپ کی روما آبادی کے مسائل کو بھی زیر بحث لانے کا عندیہ دیا ہے۔

ماہرین کا خیال ہے کہ ہنگری کو کئی مسائل ورثے میں ملے ہیں۔ ان میں یونان اور آئر لینڈ کی گھمبیر معاشی صورت حال اور اس کے ساتھ ساتھ پرتگال اور سپین کی مسلسل مخدوش ہوتی اقتصادی پوزیشن اہم ہیں۔ ویسے بھی یورپ عالمی کسادبازاری سے ابھی پوری طرح نکل نہیں پایا ہے اور اس کے اثرات تمام ملکوں پر محسوس کئے جا رہے ہیں۔

ماہرین کے خیال میں ہنگری کے لئے اس صورت حال پر مسلسل نگاہ رکھنا لازمی ہوگا۔ اس کساد بازاری کے تناظر میں یورپ کے اندر نئے اقتصادی اصلاحاتی عمل کو بھی آگے بڑھانا بوڈاپیسٹ حکومت کی ذمہ داریوں میں شامل ہے۔ اس کے علاوہ یورو کرنسی کی قدر میں عدم استحکام پر بھی بوڈاپیسٹ کو خاص نظر رکھنا ہو گی۔

Flash-Galerie Ungarn EU-Präsidentschaft EU Mitgliedschaft 2004

2004 میں ہنگری کو یورپی یونین کی رکنیت ملنے پر عوامی مسرت کا اظہار

یورپی یونین کے مختلف ملکوں میں ہنگری میں حال ہی میں متعارف کروائے جانے والے سخت میڈیا قوانین پر نا پسندیدگی کا عنصر حکومتی سطح پر کھل کرسامنے نہیں آیا ہے۔ اس قانون کے تحت حکومت کو نشریاتی اور اشاعتی مواد کے ساتھ ساتھ انٹرنیٹ کے استعمال پر کنٹرول حاصل ہو گیا ہے۔

اس کے متعارف کروانے پر ہنگری میں ذرائع ابلاغ کے نمائندے کھل کر تنقید کر رہے ہیں۔ ان کے ساتھ کئی بین الاقوامی اداروں کی آواز بھی شامل ہو چکی ہے۔ اس میڈیا قانون کے حوالے سے اوربان حکومت نے یورپ کے علاقائی سلامتی کے ادارے OSCE کے ساتھ بات چیت کی دعوت پیش کردی ہے۔ جرمن حکومت کی جانب سے اس بات چیت کو شروع کرنے کا خیر مقدم کیا گیا ہے۔

رپورٹ: عابد حسین

ادارت: ندیم گِل

DW.COM

ویب لنکس