1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

ہیلموٹ کوہل کی تدفین

جرمنی کے مدبر سیاستدان ہیلموٹ کوہل کی رحلت سولہ جون کو ہوئی تھی۔ آج یکم جولائی کو انہیں سرکاری اعزاز کے ساتھ دفن کر دیا گیا۔ ان کے اعزاز میں خصوصی یادگاری تقریبات اسٹراس برگ اور اشپیئر میں منعقد کی گئیں۔

ہیلموٹ کوہل کی آخری رسومات کی ادائیگی کے سلسلے میں آخری یادگاری تقریب جرمن وفاقی صوبے رائن لینڈ پلاٹینیٹ کے چھوٹے مگر قدیمی و تاریخی شہر اشپیئر میں ادا کی گئیں۔ اس تقریب میں جرمن چانسلر انگیلا میرکل کے ہمراہ کئی اہم شخصیات بھی موجود تھیں۔ ان میں سابق امریکی صدر بل کلنٹن بھی شامل تھے۔ اِس خصوصی تقریب میں شرکت کے لیے نو سو مہمانوں کو مدعو کیا گیا تھا۔

مسلسل بارش کے دوران جرمن اور غیر ملکی شخصیات اشپیئر کیتھیڈرل کے سامنے واقع صحن میں چھتریاں لیے کھڑے رہے۔ اس کے علاوہ ہزاروں افراد اُس سڑک پر بھی موجود تھے، جہاں سے اُن کا تابوت گزر کر مقامی قبرستان کی جانب گیا۔

Straßburg Trauerfeierlichkeiten European Parliament Holds Helmut Kohl Memorial (Getty Images/S. Gallup)

انگیلا میرکل سابق چانسلر ہیلموٹ کوہل کے تابوت کو تعظیم پیش کرتے ہوئے

اشپیئر کے تاریخی گرجا گھر کے باہر جرمن فوج کے خصوصی بینڈ نے سوگوار دھنیں بھی بجائیں اور جب جرمنی کا قومی ترانہ بجایا گیا تو رحلت پا جانے والے چانسلر ہیلموٹ کوہل کے اعزاز میں قومی پرچم کو بھی سرنگوں کر دیا گیا۔ جرمن قومی ترانہ بجانے کے بعد فوج کے جوانوں نے ہیلموٹ کوہل کا تابوت پروقار انداز میں ایک گاڑی میں منتقل کیا اور یہ خصوصی کار تابوت لے کر روانہ ہو گئی۔

اشپیئر منعقدہ تقریب سے جب تابوت روانہ ہوا تو اُس موقع پر تاریخی کیتھیڈرل میں نصب خصوصی شاہی گھڑیال کو کچھ دیر مسلسل بجایا گیا۔ رومن سلطنت کے آٹھ بادشاہوں کی رحلت پر بھی یہی تاریخی گھڑیال بجایا گیا تھا۔

Speyer Dom Trauerfeierlichkeiten für Altkanzler Kohl (picture-alliance/dpa/U. Anspach)

مرحوم سابق چانسلر کی آخری یادگاری تقریب اشپیئر کیتھیڈرل کے باہر ادا کی گئی

کوہل کے صاحبزادوں نے اشپیئر کیتھیڈرل میں منعقد کی گئی یادگاری تقریب اور وہیں دفن کرنے سے اختلاف کرتے ہوئے شرکت نہیں کی۔ ان کی خواہش تھی کہ اُن کے والد کو لُڈوِگ ہافن میں اُن کی والدہ ہینےلور کوہل کے پہلو میں دفن کیا جائے، جو کافی عرصہ قبل رحلت پا گئی تھیں۔ کوہل کے تابوت کو ایک نجی دعائیہ تقریب کے بعد خاندان کے افراد اور قریبی دوستوں کی موجودگی میں قبر میں اتار دیا گیا۔

قبل ازیں فرانسیسی شہر اسٹراس برگ میں سابق جرمن چانسلر ہیلموٹ کوہل کی یاد میں خصوصی تقریب کا اہتمام کیا گیا تھا۔ اسٹراس برگ منعقدہ تقریب میں سابق امریکی صدر بل کلنٹن کے علاوہ روسی وزیراعظم دیمتری میدویدیف، فرانسیسی صدر ایمانوئل ماکروں اور یورپی کمیشن کے صدر ژاں کلود ینکر خاص طور پر نمایاں تھے۔ اس تقریب میں جرمن سیاستدان کو انتہائی شاندار الفاظ میں خراجِ عقیدت پیش کیا گیا۔ اسٹراس برگ میں منعقد ہونے والی یادگاری تقریب دو گھنٹے تک جاری رہی۔ فرانسیسی پارلیمنٹ کے حامل شہر میں کوہل کے تابوت کو یورپی یونین کے نیلے جھنڈے میں لپیٹ کر رکھا گیا تھا۔

Ludwigshafen Überführung des Sarges von Altkanzler Kohl nach Speyer (picture-alliance/AP Photo/U. Anspach)

ہیلموٹ کوہل کے تابوت کو لُڈوِگ ہافن سے اشپیئر ایک کشتی کے ذریعے منتقل کیا گیا

اس تقریب کے بعد سابق جرمن چانسلر کے تابوت کو ایک ہیلی کاپٹر کے ذریعے اُن کے آبائی شہر لُڈوِگ ہافن منتقل کیا گیا۔ لُڈوگ ہافن سے اُن کے تابوت کو ایک کشتی کے ذریعے اشپیئر لے جایا گیا۔ کوہل کو اس شہر سے خاص انسیت تھی۔ دوسری عالمی جنگ کے دورانٓ ایک ٹین ایجر کے طور پر انہیں اسی شہر میں فضائی بمباری کے ایام میں پناہ ملی تھی۔ اشپیئر ہی کے تاریخی اور باوقار کیتھیڈرل کے ساتھ بھی وہ بہت زیادہ مانوس تھے اور انہی وجوہات کی بنیاد پر انہیں اشپیئر میں دفن کیا گیا۔

ہیلموٹ کوہل سن 1982 سے لے کر سن 1998 تک سابقہ مغربی جرمنی اور پھر متحدہ جرمنی کے چانسلر رہے۔ انہیں کے دور میں منقسم جرمنی کا اتحاد ہوا تھا۔