1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

فن و ثقافت

ہیری پوٹر سیریز کی آخری فلم

ہیری پوٹر سیریز کی آخری فلم کے پہلے حصے کا ورلڈ پریمیئر جمعہ کے روز لندن میں منعقد ہوا۔ تاہم فلم کی ریلز سے چند گھنٹے قبل تک اس کے نامور نوجوان اداکار اپنے فلمی مستقبل کے حوالے سے فکر مند رہے۔

default

Harry Potter & the Deathly Hallows: Part One نامی فلم ان دو فلموں کا پہلا حصہ ہے جو ناول نگارجے کے رولنگ کی معروف ناول سیریز ہیری پوٹر کے ساتویں اور آخری حصے پر بنائی گئی ہے۔ ابتدائی جائزوں میں اس فلم میں لیے گئے نئے منفی رخ کی تعریف کی گئی تھی تاہم بہت سے لوگوں کا کہنا ہے کہ اس فلم نے اگلے جولائی میں سیریز کی دوسری فلم کی صرف اشتہا بڑھانے کا کام کیا ہے۔

Flash-Galerie Reichste Frauen der Welt Author J. K. Rowling

ہیری پوٹر سیریز کی مصنفہ جے کےرولنگ کے بقول وہ اس سیریز کے مزید ناول نہیں لکھیں گی

سیریز کی آخری دونوں فلموں میں سے پہلے حصے کو 19 نومبر کو نمائش کے لیے پیش کیا جا رہا ہے جبکہ دوسرے حصے کی عکسبندی بھی رواں سال کے ابتدا میں ہی مکمل کر لی گئی تھی۔

Buchcover: J.K. Rowling - Harry Potter und der Gefangene von Askaban (Hörbuch)

ہیری پوٹر ناول سیریز کی اب تک چار سوملین کاپیاں فروخت ہو چکی ہیں جبکہ اس کا 69 زبانوں میں ترجمہ کیا جا چکا ہے

جمرات کو لندن میں ہونے والے فلم کے پریمیئر میں ہزاروں مداح ہیری پوٹر سیریز کی کل آٹھ فلموں کے مرکزی اداکاروں، 21 سالہ ڈینیئل ریڈ کلف ، 20 سالہ ایما واٹسن اور 22 سالہ ریوپرٹ گرنٹ کی ایک جھلک دیکنے کے لیے جمع تھے۔

پریمیئر میں فلم کے تمام اداکارو‌ں کے علاوہ فلم کی مصنف جے کے رولنگ اور کئی دیگر معروف اداکار بھی موجود تھے۔ اس موقع پرمصنفہ جے کے رولنگ نے واضح کیا کہ وہ اس سیریز کے لیے مزید کوئی ناول نہیں لکھ رہیں ہیں تاہم انہوں نے مستقبل میں نہ لکھنے کے بارے میں وضاحت نہیں کی۔

ہیری پوٹر سیریز کی پہلی فلم دو ہزار ایک میں ریلیز کی گئی تھی جس کے بعد ریلیز کی جانے والی چھ فلموں سے اب تک پانچ اعشاریہ چار بلین ڈالرز کی آمدنی ہوچکی ہے۔ اس مشہور ناول سیریز کی اب تک چار سوملین کاپیاں فروخت ہو چکی ہیں جبکہ اس کا 69 زبانوں میں ترجمہ کیا جا چکا ہے۔

رپورٹ : عنبرین فاطمہ

ادارت : افسراعوان

DW.COM