1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

صحت

ہڈی ٹوٹنے کی پیش گوئی، چہرے کی جھریوں کے ذریعے

امریکہ میں جاری کیے گئے ایک تازہ تحقیق کے نتائج کے مطابق کسی خاتون کے چہرے کی جھریوں سے ممکنہ طور پر یہ اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ اس کے جسم کی کسی ہڈی کے ٹوٹنے کا امکان کتنا زیادہ ہے۔

default

واشنگٹن سے ملنے والی رپورٹوں میں بتایا گیا ہے کہ کسی خاتون کے جسم کی کسی ہڈی کے ٹوٹنے کا درست اندازہ لگانا اس طرح ممکن ہو سکتا ہےکہ انسانی جلد اور ہڈیوں میں پائی جانے والی پروٹین کی اقسام اور سطح کا آپس میں گہرا تعلق ہے۔ اگر کسی خاتون کے چہرے یا گردن پر بہت زیادہ جھریاں موجود ہوں تو اس کا مطلب یہ ہو گا کہ اس کی ہڈیوں میں پائی جانے والی پروٹین کی کمی کے باعث ان ہڈیوں کے ٹوٹنے کا خطرہ کافی زیادہ ہے۔امریکہ کی Yale یونیورسٹی کے ماہرین کی اس نئی ریسرچ کے نتائج پیر کو جاری کیے گئے۔

اس تحقیقی مطالعے کے دوران ماہرین نے 114 ایسی خواتین کا تفصیلی طبی معائنہ کیا، جن میں ماہواری کے خاتمے کو زیادہ عرصہ نہیں ہوا تھا۔ اس تحقیق کے دوران پہلے سے جاری ایک میڈیکل ریسرچ پروجیکٹ کے تحت جن خواتین سے متعلق اعداد و شمار کا مطالعہ کیا گیا، ان کا تعلق امریکہ کے مختلف شہروں سے تھا۔ یہ خواتین ایسی تھیں جن میں menopause کو ابھی تین سال سے زائد کا عرصہ نہیں ہوا تھا۔

Flash-Galerie Berlusconis Skandale Veronica Lario

چہرے اور گردن پر بہت زیادہ جھریوں والی خواتین میں یہ دیکھا گیا کہ ان کی ہڈیاں زیادہ مضبوط نہیں تھیں

اس ریسرچ کے دوران ایسی خواتین کے چہروں اور گردن پر 11 مختلف مقامات پر جھریوں کا مطالعہ کیا گیا۔ اس کے لیے ان جھریوں کا ظاہری طور پر بھی مشاہدہ کیا گیا اور اس مشین کے ذریعے بھی جسے durometer کہا جاتا ہے۔ یوں یہ پتہ چلایا گیا کہ ان خواتین کے چہروں اور گردن پر ان کی جلد کتنی سخت اور جھریوں والی ہو چکی تھی۔ پھر انہی خواتین کے جسموں میں ان کی ہڈیوں کے مضبوط اور صحت مند ہونے کا بھی الٹراساؤنڈ اور ایکسرے کے ذریعے مشاہدہ کیا گیا۔Yale یونیورسٹی کے اسکول آف میڈیسن کے زچہ بچہ کے شعبے کی ایسوسی ایٹ پروفیسر لبنیٰ پال کے مطابق اس ریسرچ سے انہیں اور ان کے ساتھی ماہرین کو یہ پتہ چلا کہ زیر مطالعہ خواتین میں چہرے اور گردن کی جھریوں کا ان کی ہڈیوں کی مضبوطی سے گہرا تعلق ہے۔ یعنی جیسے جیسے کسی خاتون کے چہرے اور گردن پر جھریاں زیادہ اور گہری ہوتی جائیں گی، اتنی ہی اس خاتون کی ہڈیوں کی مضبوطی بھی کم ہوتی جائے گی۔

لبنیٰ پال کے بقول چہرے اور گردن پر بہت زیادہ جھریوں والی خواتین میں یہ دیکھا گیا کہ ان کی ہڈیاں زیادہ مضبوط نہیں تھیں اور اس بات کا اس حقیقت سے کوئی تعلق نہ نکلا کہ ان خواتین کی عمر کتنی تھی۔ لیکن ایسی تمام خواتین میں طبی حوالے سے ماہواری کا عمل بند ہو چکا تھا۔ امریکی شہر بوسٹن میں اینڈوکرائن سوسائٹی کی طرف سے جاری کیے گئے اس ریسرچ کے نتائج کے مطابق بظاہر یہ بات ثابت ہوگئی ہے کہ جتنی کسی خاتون کے چہرے اور گردن پر جھریاں کم ہوں گی، اتنی ہی اس کی ہڈیاں اور ان ہڈیوں کے ڈھانچے زیادہ مضبوط ہوں گے۔

رپورٹ: عصمت جبیں

ادارت:کشور مصطفٰی

DW.COM

ویب لنکس