1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

فن و ثقافت

ہٹلر کی پینٹنگز، 42 ہزار یورو میں فروخت

ہفتے کے روز اڈولف ہٹلرکے نوجوانی کے دور میں بنائی ہوئی تین واٹر کلر پینٹنگز مجموعی طور پر بیالیس ہزار یورو میں فروخت ہوئیں۔ جرمن صوبے باویریا کے شہر نیورنبرگ میں فروخت ہونے والی ان تصاویر پر ہٹلر کے دستخط ثبت ہیں۔

default

اس سے قبل بھی اڈولف ہٹلر کی بنائی ہوئی تصاویر کی نیلامی ہوتی رہی ہے

یہ پینٹنگز فروخت کرنے والے پیربیرٹ وائلڈلر کے مطابق یہ تینوں تصاویر تین مختلف افراد کو بیچی گئیں۔ خریدنے والے افراد نے ان تصاویر کی فروخت میں فون کے ذریعے بولی لگائی۔ اب تک ہٹلر کی بنائی ہوئی پینٹنگز کی اصل تعداد کسی کو معلوم نہیں تاہم ایک اندازے کے مطابق ان کی تعداد سات سو بیس کے قریب بتائی جاتی ہے۔ ان تصاویر میں واٹر کلر پینٹنگز کے علاوہ سادہ اسکیچ بھی شامل ہیں۔

Versteigerung von Hitler-Bildern in London

اب تک ہٹلر کی بنائی ہوئی پینٹنگز کی اصل تعداد کسی کو معلوم نہیں

تصاویر بیچنے والے جرمن شہری وائلڈلر کے مطابق ان تصاویر کی خریداری میں بہت سے افراد نے دلچسپی کا اظہار کیا تھا۔ انہوں نے کہا:’’خریداری میں دانشوروں، تاجروں حتیٰ کے عام افراد نے بھی دلچسپی ظاہر کی تھی۔ شائد اُن افراد نے اِن تاریخی تصاویر کے لئے پیسے بچا رکھے ہوں‘‘

اطلاعات کے مطابق فروخت کی گئیں تصاویر نازی تحریک کے نمایاں سربراہ اور جرمن آمر اڈولف ہٹلر نے 1910ء سے 1911 ء کے درمیان آسٹریا کے شہر ویانا میں تخلیق کی تھیں۔ ہٹلر کو مصوربننے کا بہت شوق تھا، اسی لئے انہوں نے ویانا کے ایک اسکول میں مصوری کے شعبے میں داخلے کی کوشش کی تھی مگر وہ اس میں کامیاب نہیں ہو پائے تھے۔

ماضی میں بھی جرمنی سمیت دیگر ممالک میں ہٹلر کی بنائی ہوئی بہت سی تصاویر کی اس طرح کی نیلامی ہو چکی ہے۔

ہفتے کے روز نیلام کی جانے والے یہ تین واٹر کلر پینٹنگز میں قدرتی مناظر کی تصویر کشی کی گئی ہے۔ ان میں سے ایک تصویر 24 ہزار یورو میں فروخت ہوئی، دوسری تصویر کے لئے سب سے بڑی بولی گیارہ ہزار یورو لگائی گئی اور تیسری تصویر کو سات ہزار یورو میں خریدا گیا۔

رپورٹ : عاطف توقیر

ادارت : عاطف بلوچ