1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

معاشرہ

گوانتانامو کے قیدیوں پر امریکہ میں مقدمات

امریکہ میں گیارہ ستمبر دوہزار ایک کے دہشت گردانہ حملوں کے ملزم خالد شیخ محمد اور دیگر ملزمان کو نیویارک کی ایک سول عدالت میں پیش کیا جائے گا۔

default

خالد شیخ محمد پر امریکی سول عدالت میں مقدمہ چلایا جائے گا

امريکہ کے شہر نيويارک کے علاقے مين ہيٹن کے جنوبی حصے کو خالد شيخ محمد اور ان کے مبينہ دہشت گرد ساتھيوں پر مقدمات کی سماعت کے دوران کئی ہفتوں بلکہ مہينوں تک کے لئے ايک قلعے ميں تبديل کرديا گيا ہے۔ حفاظتی انتظامات نہايت سخت ہيں۔چھتوں پر ماہر نشانہ باز پہرہ دے رہے ہيں،اہم سڑکوں پر بکتر بند گاڑياں تعينات ہيں اور ہيلی کاپٹر نيچی پروازيں کررہے ہيں۔ نيويارک پوليس کے سربراہ کو يقين ہے کہ وہ سيکيورٹی کے اس بڑے چيلنج سے نمٹ ليں گے۔

ملزمان ميں القاعدہ کے ايسے اراکين بھی شامل ہيں جن پر مشرقی افريقہ ميں امريکی سفارتخانوں پر بم حملوں کے الزام ميں مقدمہ چلايا جارہا ہے۔ شيخ عمر عبدالرحمن پر سن1993ء ميں ورلڈٹريڈ سينٹر ميں بم دھماکہ کرنے کا الزام ہے۔ عدالت انہيں عمر قيد کی سزا سنا چکی ہے۔

Terrorwarnung in USA

مین ہیٹن اس وقت ایک قلعے کا منظر پیش کر رہا ہے

دہشت گردی کے جرائم کے خلاف امريکی عدالتوں کی کارکردگی بہت اچھی ہے۔ 88 فيصد ملزموں پر جرم ثابت کرکے انہيں سزائيں دی جاتی ہيں۔ سن 2001ء کو نيويارک کے ورلڈٹريڈ سينٹر پر دہشت گردانہ حملے ميں ہلاک ہونے والے تقريباً 3000 افراد کے لواحقين ميں سے بہت سے اس پر مطمئن ہيں کہ ملزموں پر نيويارک ہی ميں مقدمہ چلايا جائے گا۔ وہ نيويارک کے علاوہ کسی اور شہر کو اس کے لئے موزوں نہيں سمجھتے۔

Laurie van Auken کے شوہر ورلڈٹريڈ سينٹرپر حملے مي ہلاک ہوگئے تھے۔ ان کا کہنا ہے:

" ميرے اور بہت سے دوسروں کے لئے يہ بہت اطمينان کی بات ہے کہ امريکی عدالتی اور قانونی نظام کی کارکردگی اتنی اچھی ہے۔ "

تاہم سب ہی اس خيال کے حامی نہيں ہيں۔ Pennsylvania ميں گرنے والے طيارے کے ہلاک ہونے والے مسافروں ميںAlice Hoagland کا لڑکا بھی تھا۔ ان کا کہنا ہے کہ نيويارک ميں مقدمہ چلا کر ملزمان کو امريکہ دشمن نعروں کے لئے ايک پليٹ فرم مہيا کيا جارہا ہے۔ سيکيورٹی کے ماہر رابرٹ اسٹرينگ کا کہنا ہے کہ مقدمہ چلانے کے لئے نيويارک کا انتخاب کرکے اسے عالمی دہشت گردوں کی توجہ کا مرکز بنا ديا گيا ہے۔ انہوں نے کہا:

" ہماری پريشانی کی وجہ خودکش حملہ آور ہيں۔ہميں يہ فکر ہے کہ عدالت ميں پيش ہونے والے دہشت گردوں کی وجہ سے دوسرے دہشت گرد بھی کھنچ کر يہاں آئيں گے۔ "

دہشت گردی کے الزام ميں مقدمات نيويارک ميں چلانے کے مخالفين کا کہنا ہے کہ خالد شيخ محمد کو گوانتانامو جيل کی اونچی باڑھ کے پيچھے عدالت ميں پنش کنا جانا چاہئے تھا۔ سلامتی کے ماہرين يہ کہہ رہے ہيں کہ اس صدی کے " دہشت گردی کے سب سے بڑے مقدمے" ميں ملزمان کے وکلاء واٹر بورڈنگ جيسے تفتيشی طريقوں کو عالمی رائے عامہ کے سامنے بھر پور تنقيد کا نشانہ بنائيں گے۔

رپورٹ : تھامس شمٹ، نیویارک / ترجمہ : شہاب احمد صدیقی

ادارت : مقبول ملک