1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

گرامین بینک کے محمد یونس کی برطرفی: عدالتی فیصلہ آج متوقع

بنگلہ دیش میں سرکاری دفتر استغاثہ کے مطابق اس بارے میں فیصلہ ہائی کورٹ کرے گی کہ آیا نوبل انعام یافتہ ماہر اقتصادیات محمد یونس کو گرامین بینک میں ان کے عہدے سے ہٹایا جانا قانونی طور پر جائز تھا۔

default

بہت چھوٹی مالیت کے قرضوں یا مائیکرو کریڈٹس کے اجراء کے لیے مشہور محمد یونس کے قائم کر دہ گرامین بینک کو اس کی کارکردگی کے شروع کے سالوں سے ہی بے تحاشا شہرت حاصل ہو گئی تھی۔

Flash-Galerie Muhammad Yunus Grameen Bank in Dhaka

محمد یونس کی ڈھاکہ میں ان کی اہلیہ اور بیٹی کے ہمراہ لی گئی ایک تصویر، فائل فوٹو

محمد یونس ابھی چند روز پہلے تک گرامین بینک میں ایک اعلیٰ انتظامی عہدے پر فائز تھے مگر بالواسطہ طور پر ڈھاکہ حکومت نے انہیں ان کے منصب سے یہ کہہ کر زبردستی علیحدہ کر دیا تھا کہ ان کا اس منصب پر فائز رہنا ملکی قوانین کے مطابق نہیں تھا۔

ڈھاکہ میں بنگلہ دیش کے ڈپٹی اٹارنی جنرل چکمہ نے اتوار کے روز بتایا کہ محمد یونس کی گرامین بینک میں ان کے عہدے سے برطرفی کے سرکاری فیصلے کے قانون کے مطابق ہونے سے متعلق ہائی کورٹ کا فیصلہ آج اتور کے روز متوقع ہے۔

بنگلہ دیش کے مرکزی بینک نے گزشتہ بدھ کے روز یہ حکم دیا تھا کہ محمد یونس ملک میں کارکنوں کے لیے ریٹائرمنٹ کی عمر سے متعلق قوانین کی خلاف ورزی کرتے ہوئے گرامین بینک میں ایک اعلیٰ عہدے پر فائز تھے۔ اسی لیے مرکزی بینک نے ان کی برطرفی کا حکم جاری کر دیا گیا تھا۔

اس پر نوبل انعام یافتہ محمد یونس نے اپنی برطرفی کو عدالت میں چیلنج کر دیا تھا۔ ان کے خیال میں وہ اس عہدے پر فائز رہ سکتے ہیں اور اسی لیے تاحال اپنی ذمہ داریاں بھی انجام دے رہے ہیں۔

Phone business financed by a Grameen Bank loan

گرامین بینک نے بنگلہ دیشی خواتین کو تھوڑے سرمائے سے اپنا کاروبار شروع کرنے کے بے تحاشا مواقع فراہم کیے

محمد یونس کے ملک میں غربت کے خاتمے کے لیے غریب شہریوں کو بہت تھوڑی مالیت کے قرضوں کے اجراء سے متعلق اقتصادی منصوبے اور اس مقصد کے لیے قائم کیے گئے اپنی نوعیت کے اولین مالیاتی ادارے گرامین بینک کو دنیا بھر میں بہت شہرت حاصل ہو چکی ہے۔

ان کے اس منفرد منصوبے کے بعد ترقی پذیر ملکوں میں اس طرح کے چھوٹے قرضوں کا اجراء بہت رواج پکڑ گیا تھا۔ اسی بنا پر سن 2006ء میں محمد یونس اور ان کے گرامین بینک کو امن کے نوبل انعام کا حقدار ٹھرایا گیا تھا۔

رپورٹ: عصمت جبیں

ادارت: مقبول ملک

DW.COM

ویب لنکس