1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

کھیل

کیریبین میں T20 کا میلہ ، پاکستان کی روانگی

کیریببین میں ٹوئنٹی ٹوئنٹی کرکٹ کے عالمی مقابلوں کا میلہ سجنے میں چند ہی دن باقی ہیں جبکہ دفاعی چیمپیئن پاکستانی دستہ اعزاز کے دفاع کے لئے ہفتے کو لاہور سے روانہ ہو رہا ہے۔

default

ایک روزہ کرکٹ کے ابتدائی دو عالمی مقابلے جیتنے والے ملک ویسٹ انڈیز میں یہ کرکٹ کا دوسرا عالمی مقابلہ ہوگا۔ اس سے قبل 2007ء میں ایک روزہ مقابلوں کا عالمی کپ بھی ویسٹ انڈیز میں منعقد ہوا تھا۔

Rückkehr der afghanischen Cricket-Mannschaft nach Kabul

افغانستان کی کرکٹ ٹیم کے کپتان نوروز منگل کو ان کے مداحوں نے کاندھوں پر اٹھا رکھا ہے

ٹوئنٹی ٹوئنٹی کے اس دوسرے عالمی مقابلے کا آغاز 30 اپریل کو میزبان ویسٹ انڈیز اور آئرلینڈ جبکہ نیوزی لینڈ اور سری لنکا کے مابین مقابلے سے ہوگا۔ سیمی فائنل مرحلے سے قبل بارہ ممالک کی ٹیموں کے مابین ویسٹ انڈیز کے میدانوں میں چوبیس مقابلے ہوں گے۔ اس T20 ورلڈ کپ میں افغانستان اور آئرلینڈ کی ٹیمیں پہلی بار حصہ لے رہی ہیں۔

دفاعی چیمپیئن پاکستانی ٹیم لاہور سے دبئی اور پھر لندن سے ہوتے ہوئے کیریبین پہنچے گی۔ آل راؤنڈر شاہد خان آفریدی کی قیادت میں پاکستانی دستے میں تجربہ کار کھلاڑیوں مثلاً عبدالرزاق، محمد آصف اور مصباح الحق سمیت عمر اکمل، سعید اجمل اور محمد عامر جیسے نوجوانوں کو بھی شامل کیا گیا ہے۔

Cricketspieler Shahid Afridi

شاہد خان آفریدی

فاسٹ باؤلر عمر گل اور بلے باز یاسر عرفات دوران مشق زخمی ہونے کے سبب ویسٹ انڈیز نہیں جا پائیں گے۔ گل کی جگہ محمد سمیع کو ٹیم میں شامل کیا گیا ہے۔

پاکستان اپنا پہلا میچ یکم مئی کو بنگلہ دیش کے خلاف کھیلے گا جبکہ اگلے دن ہی آسٹریلیا کا مقابلہ کرے گا۔ آفریدی کے بقول وہ کسی بھی قسم کے دباؤ میں نہیں اور اپنے روایتی جارحانہ انداز سے ٹیم کی قیادت پر یقین رکھتے ہیں۔ کوچ وقار یونس کے لئے بھی یہ پہلا اہم امتحان ہے۔

اس بار ان مقابلوں پر براہ راست تبصرے جرمن، فرانسیسی، ڈینش، اطالوی، روسی اور ترک سمیت پندرہ زبانوں میں 58 خطوں میں نشر کئے جائیں گے۔ ان اقدامات کا مقصد یورپ میں کرکٹ کو فروغ دینا ہے۔

رپورٹ : شادی خان سیف

ادارت : امجد علی

DW.COM