1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

کولمبو کا تامل ٹائیگرز کے اثاثوں کی واپسی کا مطالبہ

کولمبو میں سری لنکا کی وزارت دفاع نے عالمی برادری سے مطالبہ کیا ہے کہ علیٰحدگی پسند تامل ٹائیگرز کے دوسرے ممالک میں موجود کئی ملین ڈالر مالیت کے اثاثے سری لنکا کے حوالے کئے جائیں۔

default

وزارت دفاع کی جانب سے جاری کردہ ایک تصویر میں تامل علاقوں سے برآمد کیا جانے والا اسلحہ

سری لنکا کے سیکریٹری دفاع گوتابایا راجا پاکسے کی جانب سے یہ مطالبہ تامل ٹائیگرز کی تنظیم کے نئے سربراہ کی گرفتاری کے چند ہفتے بعد سامنے آیا ہے۔ سالہا سال تک تامل ایلام کے لبریشن ٹائیگرز کی قیادت کرنے والے پربھاکرن کی اسی سال گرمیوں میں ہلاکت کے بعد ایک سینئر تامل لیڈر پٹمانتھن نےLTTE کی کمان سنبھالی تھی تاہم انہیں ایک خفیہ آپریشن کے دوراں جنوب مشرقی ایشیا کے ایک ملک سے گرفتار کر لیا گیا تھا۔

Der Tamilische Rebellenführer Velupillai Prabhakaran im Februar 2009

سالہا سال تک تامل ایلام کے لبریشن ٹائیگرز کی قیادت کرنے والے پربھاکرن کی اسی سال گرمیوں میں ہلاکت ہو گئی تھی

کولمبو حکومت کے ذرائع یہ بتانے سے مسلسل گریزاں رہے کہ پٹمانتھن کو کس ملک سے گرفتار کیا گیا تھا۔ پٹمانتھن اس وقت سری لنکا کے سیکیورٹی اداروں کی تحویل میں ہیں اور ان سے تفتیش کا سلسلہ جاری ہے۔ پٹمانتھن کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ وہ LTTE کے لئے تین عشروں تک بڑے پیمانے پر ہتھیار اور گولہ بارود مہیا کرنے کا کام کرتے رہے۔

کولمبو میں ملکی وزارت دفاع کے ذرائع کا کہنا ہے:’’پٹمانتھن بہت تجربہ کار شخص ہیں۔ اسی لئے ان سے معلومات کا حصول بہت مشکل کام ہے اور ان سے یہ معلومات بہت آہستہ آہستہ حاصل ہو رہی ہیں۔‘‘

Sri Lanka Tamilen mit Flagge

سری لنکا میں حکومتی فورسز اور تامل ٹائیگروں کے درمیان جاری رہنے والی لڑائی ایشیا کی تاریخ کی سب سے طویل خانہ جنگی کہلاتی ہے

سرکاری حکام یہ دعوے کرتے ہیں تامل باغیوں کے لئے ہتھیاروں کی خریداری کو یقینی بنانے کے لئے پٹمانتھن ملک سے باہر مالی وسائل کے حصول اور باغیوں کے جنگی منصوبوں کی فنڈنگ کے لئے ایک بڑا نیٹ ورک چلا رہے تھے۔ حکام کے مطابق LTTE نے کئی ملکوں میں بہت سی سپر مارکیٹوں، پٹرول پمپوں اور کئی دیگر شعبوں میں وسیع تر سرمایہ کاری کر رکھی ہے جہاں سے اسے کثیر رقوم ملتی رہی ہیں۔

کولمبو حکومت کے ذرائع کا مئوقف ہے کہ کئی ملکوں میں لبریشن ٹائیگرز آف تامل ایلام پر ایک تنظیم کی حیثیت سے لگائی گئی پابندیوں کے باعث یہ سرمایہ کاری مختلف ناموں سے کی گئی۔ ملکی وزارت دفاع کے مطابق تامل ٹائیگرز کے ایسے اثاثوں کی کل مالیت 300 ملین ڈالر سے لے کر ایک بلین ڈالر کے قریب تک بنتی ہے۔

Sri Lanka Kampf gegen Tamil Tigers

مئی کے مہینے میں حکومت فورسز نے حتمی آپریشن کے بعد تامل ٹائیگروں کی شکست کا اعلان کیا تھا

اس تناظر میں سال رواں کی دوسری سہ ماہی میں کی گئی اور حکومت کی طرف سے بہت کامیاب قرار دی جانے والی باغیوں کے خلاف ملکی فوج کی بھر پور کارروائی کے بعد کولمبو نے اب بین الاقوامی برادری سے یہ مطالبے کرنا شروع کر دئے ہیں کہ تامل ٹائیگرز کی شکست کے بعد یہ جملہ اثاثے سری لنکا کی حکومت کو منتقل کئے جانا چاہیئں۔

کئی ہفتوں تک جاری رہنے والی، شمالی سری لنکا میں تامل باغیوں کے خلاف اس فوجی کارروائی میں ہزاروں عسکریت پسندوں کے ساتھ ساتھ بے شمار شہری بھی مارے گئے اور لاکھوں افراد بے گھر بھی ہو گئے تھے۔

اس جنگی آپریشن کی تکمیل اور باغیوں کے رہنما پربھاکرن کی ہلاکت کے بعد مئی کے مہینے میں حکومت نے یہ اعلان کر دیا تھا کہ جنوبی ایشیا کی اس جزیرہ ریاست کے شمال میں قریب تین دہائیوں تک جاری رہنے والی خانہ جنگی پر بالآخر قابو پا لیا گیا ہے۔

رپورٹ : عاطف توقیر

ادارت : مقبول ملک