1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

کوسوو، بین الاقوامی عدالت انصاف کے فیصلے کی پذیرائی

کوسوو کی یک طرفہ اعلان آزادی سے متعلق سیربیا کی اپیل پر بین الاقوامی عدالت انصاف کے فیصلے کی عالمی سطح پر پذیرائی کا سلسلہ جاری ہے۔ سیربیا نے اس فیصلے پر تنقید کی ہے۔

default

البانوی نژاد شہری کوسوو کا جھنڈا لئے خوشی مناتے ہوئے

جرمن وزیر خارجہ گیڈو ویسٹر ویلے نے بین الاقوامی عدالت انصاف کے فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ کوسوو کی آزادی اور جغرافیائی حدود ناقابل تنسیخ عالمی حقیقت ہے۔ فرانس کے وزیر خارجہ برنارڈ کوشنر نے فیصلے پر مسرت کا اظہار کیا اور کہا کہ کوسوو کا اعلان آزادی، قانون بین الاقوام کے منافی ہرگز نہ تھا اور عدالت نے اس کی توثیق کردی ہے۔

یورپی یونین نے اس یقین کا اظہار کیا ہے کہ عدالت کے فیصلے کے بعد کوسوو اور سیربیا اپنے تعلقات کو مذاکرات کے ذریعے بہتر انداز میں حل کرتے ہوئے مستقبل میں یونین کی رکنیت حاصل کر سکیں گی۔ یورپی یونین کی خارجہ امور کی چیف کیتھرین ایشٹن کی جانب سے عالمی عدالت انصاف کے فیصلے پر جاری ہونے والے بیان میں کہا گیا کہ یونین پرشٹینا اور بیلغراد کے درمیان مذاکراتی عمل شروع کے لئے معاونت کر سکتی ہے۔ ایشٹن کے مطابق ڈائیلاگ کا عمل دونوں ملکوں کے درمیان تعاون کو فروغ دے گا۔

Außenminister Westerwelle in Uganda

جرمن وزیر خارجہ گیڈو ویسٹر ویلے

بین الاقوامی عدالت انصاف کے فیصلے پر برطانیہ کی جانب سے خیر مقدم سامنے آیا ہے۔ برطانیہ کے وزیر خارجہ ولیم ہیگ نے کہا ہے کہ کوسووکی آزادی کو تسلیم نہ کرنے والے ممالک اب کوسوو کے تشخص کو تسلیم کر لیں۔ ہیگ کا مزید کہنا ہے کہ کوسوو کا اعلان آزادی بین الاقوامی قانون سے متصادم نہیں تھا۔ ہیگ نے کوسوو اور سیربیا کو مشورہ دیا کہ وہ اس موقع سے فائدہ اٹھاتے ہوئے مصالحتی عمل شروع کردیں۔

عدالتی فیصلے کے بعد امریکہ نے سیربیا کو تجویز کیا ہے کہ وہ کوسوو کو باقاعدہ طور پر تسلیم کر لے۔ امریکی وزیر خارجہ ہلیری کلنٹن کی جانب سے فیصلے پر خیر مقدمی بیان میں دنیا کے دوسرے ملکوں سے کہا گیا ہے کہ وہ کوسوو کی آزادی کو تسلیم کر لیں۔ اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل بان کی مون نے فیصلے کے بعد فریقین سے کہا ہے کہ وہ اشتعال انگیز ردعمل سے ہر ممکن اجتناب کریں اور مذاکرات کی راہ اپنائیں۔ البانوی وزیر اعظم Sali Berisha نے اس فیصلے کو تاریخی قرار دیا۔

Boris Tadic Mazedonien

سیربیا کے صدر بورس تادچ

کوسوو کو تسلیم نہ کرنے والے یورپی ملکوں میں اسپین بھی شامل ہے اور ہسپانوی وزارت خارجہ نے کہا ہے کہ وہ عدالتی فیصلے کا احترام کرتی ہے۔ کوسوو کو قبرص نے بھی تسلیم نہیں کیا اور قبرصی حکومت کے مطابق وہ فیصلے کے مندرجات کا مطالعہ کر رہی ہے۔

روس نے بین الاقوامی عدالت کے فیصلے کو مسترد کردیا ہے۔ روسی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ اس معاملے پر ان کا مؤقف عدالتی فیصلے کے بعد تبدیل نہیں ہوا ہے۔ روس سیربیا کی حکومت کا حلیف ہے جس نے عدالتی فیصلے کو تسلیم کرنے سے انکار کردیا ہے۔ سیربیا کے صدر بورس تادچ نے فیصلے کے بعد کہا کہ ان کی عوام کوسوو کی آزادی کو کبھی تسلیم نہیں کریں گے۔

رپورٹ: عابد حسین

ادارت: شادی خان سیف

DW.COM