1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

کشمیری اور ہم ایک ہی خاندان کا حصہ ہیں، بھارتی وزیر داخلہ

وزیر داخلہ راج  ناتھ سنگھ  نے بھارت کی ریاستی حکومتوں سے کہا ہے کہ وہ ملک کے مختلف حصوں میں رہنے والے کشمیریوں کی حفاظت کریں. انہوں نے راجستھان میں بدھ کو کشمیری طالب علموں پر ہوئے مبینہ حملےکی مذمت بھی کی۔

وزیر داخلہ نے کہا کہ انہیں  ایسی خبریں ملی ہیں کہ ملک کے کچھ حصوں میں مبینہ طور پر کشمیری نوجوانوں کو تشدد  کا نشانہ بنایا گیا ہے۔ بھارتی اخبار ٹائمز آف انڈیا کی رپورٹ کے مطابق ایسی اطلاعات ہیں کہ اتر پردیش اور راجستھان میں کشمیری طلباء کو دھمکیاں بھی دی گئی ہیں۔  سوشل میڈیا پر اتر پردیش نونرمان سینا نامی ایک تنظیم کے میرٹھ میں لگائے گئے بل بورڈز کی تصویر بھی کافی زیادہ شئیر کی جا رہی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ بھارتی  فوج پر پتھر مارنے والے کشمیریوں کا بائیکاٹ کیا جائے اور كشمیری  اترپردیش چھوڑ دیں۔

اس سے قبل  راجستھان کی میواڑ یونیورسٹی میں کشمیری طالب علموں کے ایک گروپ پر مقامی لوگوں نے مبینہ طور پر حملہ کیا اور انہیں دہشت گرد کہا  تاہم اس واقعے میں کسی کو شدید چوٹیں نہیں آئی تھیں۔

بھارتی وزیر داخلہ نے آج مختلف ٹویٹس میں کہا کہ کشمیری بھی اس ملک کے  شہری ہیں۔  انہوں نے کہا، ’’کشمیریوں کے ساتھ زیادتی کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔‘‘

بھارت کے زیر انتظام کشمیر میں کئی ماہ سے حالات مسلسل مظاہروں کی وجہ سے شدید کشیدگی کا شکار ہیں۔ ان مظاہروں کے دوران مقامی لوگوں اور سکیورٹی فورسز کے درمیان تصادم کی کئی ویڈیوز سوشل میڈیا پر بھی وائرل ہو چکی  ہیں۔