1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

کھیل

کرکٹ ورلڈ کپ: پاکستان اور بھارت کا ممکنہ سیمی فائنل

ایسے امکانات پیدا ہو گئے ہیں کہ چندی گڑھ کے اسٹیڈیم میں کرکٹ کے دو روایتی حریف یعنی پاکستان اور بھارت کی کرکٹ ٹیمیں مد مقابل ہو سکتی ہیں۔ اگر ایسا ہوا تو یہ ایک انتہائی دلچسپ اور زوردار مقابلہ ہو گا۔

default

کرکٹ ورلڈ کپ میں پاکستان اور ویسٹ انڈیز کی ٹیمیں بدھ کو پہلے کوارٹر فائنل میں ایک دوسرے کا سامنا کریں گی۔ یہ میچ بنگلہ دیش کے دارالحکومت ڈھاکہ میں کھیلا جائے گا۔ ورلڈ کپ کا ایک اور کوارٹر فائنل بھارت اور دفاعی چیمپیئن آسٹریلیا کی ٹیموں کے درمیان بھارتی شہر احمد آباد میں کھیلا جائے گا۔ یہ چوبیس تاریخ کو ہو گا۔ ان دونوں کوارٹر فائنلز کی فاتح ٹیمیں دوسرا سیمی فائنل میچ چندی گڑھ میں کھیلیں گی۔ یہ میچ تیس مارچ کو ہو گا۔

تجزیہ کاروں کا خیال ہے کہ پاکستانی ٹیم ، اگر اپ سیٹ نہیں ہوتا تو ویسٹ انڈیز کی ٹیم کو شکست دینے کی صلاحیت رکھتی ہے۔ اس طرح بظاہر یہ سب سے آسان کوارٹر فائنل خیال کیا جا رہا ہے۔ ویسٹ انڈیز کی ٹیم بہتر رن اوسط کی بنیاد پر بنگلہ دیش کی ٹیم کو پیچھے چھوڑنے میں کامیاب ہوئی اور اس باعث وہ ورلڈ کپ کے کوارٹر فائنل تک پہنچ پائی ہے۔ دوسری جانب پاکستان اپنے گروپ کی ٹاپ ٹیم ہے۔

جنوبی افریقہ اور نیوزی لینڈ کا میچ بھی کانٹے دار ہونے کی توقع کی جا رہی ہے۔ یہ کوارٹر فائنل جمعہ کو ڈھاکہ کے اسٹیڈیم میں کھیلا جائے گا۔ اسی طرح انگلینڈ اور سری لنکا کا میچ بھی خاصا دلچسپ ہو سکتا ہے۔ یہ میچ کولمبو میں ہفتہ کے روز کھیلا جائے گا۔ ماہرین کا خیال ہے کہ سری لنکا اور جنوبی افریقہ پہلے سیمی فائنل کی ممکنہ ٹیمیں ہو سکتی ہیں۔

Flash-Galerie Pakistan Cricket Trainer Shahid Afridi

شاہد آفریدی

بھارت اور آسٹریلیا کی ٹیموں کے درمیان احمد آباد میں کھیلا جانے والا کوارٹر فائنل بعض ماہرین کے نزدیک ایک منی فائنل سے کم نہیں ہے۔ آسٹریلوی ٹیم کے خلاف بھارتی سرزمین پر کھیلے جانے والے گزشتہ پندرہ ایک روزہ میچوں میں سے نو میں بھارتی کرکٹ ٹیم کو شکست کا سامنا رہا ہے۔ اس مناسبت سے احمد آباد کوارٹر فا‌ئنل میچ میں مہندر سنگھ دھونی کی الیون قدرے دباؤ کا سامنا کر رہی ہے۔

کرکٹ کے ماہرین کا خیال ہے کہ احمد آباد کا میچ یقینی طور پر خاصا ٹینس ہو گا۔ بھارتی ٹیم کے مورال کو اس میچ میں کامیابی سے بہت حوصلہ ملے گا اور وہ اس باعث موہالی کے گراؤنڈ پر پاکستانی ٹیم (جیت کی صورت میں) کا بہتر انداز میں مقابلہ کر سکتی ہے۔ یہ امر بھی اہم ہے کہ ورلڈ کپ کے میچوں میں بھارتی ٹیم کا پلہ پاکستانی ٹیم کے خلاف بھاری رہا ہے۔ یہ ایک نفسیاتی حربہ ہوگا جو بھارتی ٹیم کے مورال کو اور بلند کر سکتا ہے۔

رپورٹ: عابد حسین

ادارت: ندیم گِل

DW.COM

ویب لنکس