1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

کانگریس بائیں بازو کے ساتھ ہاتھ ملانے کے لئے تیار

بھارتی وزیر اعظم من موہن سنگھ نے کہا ہے کہ عام انتخابات میں کامیابی کی صورت میں متحدہ ترقی پسند اتحاد بائیں بازو کو اپنے ساتھ ملانے کے لئے تیار ہے تاہم امریکہ کے ساتھ غیر عسکری ایٹمی ڈیل کو خطرہ پہنچنے نہیں دیا جائے گا۔

default

بھارتی وزیر اعظم من موہن سنگھ ایک الیکشن ریلی کے دوران

ڈاکٹر من موہن سنگھ نے کہا کہ کانگریس کی سربراہی والی UPA حکومت امریکہ کے ساتھ غیر عسکری جوہری معاہدے پر کوئی آنچ آنے نہیں دے گی کیوں کہ ان کے بقول یہ معاہدہ بھارت اور بھارتی عوام کی ترقی کے لئے انتہائی اہمیت کا حامل ہے۔

Schauspielerin Hema Malini Wahlkampf Indien

بالی ووڈ اداکارہ اور راجیہ سبھا رکن ہیما مالینی ریاست اڑیسہ میں بھارتیہ جنتا پارٹی کی ایک الیکشن ریلی کے دوران

بھارتی وزیر اعظم من موہن سنگھ نے ان خیالات کا اظہار نجی ٹیلی ویژن چینل CNN-IBN کے ساتھ ایک انٹرویو کے دوران کیا۔

من موہن سنگھ نے اس انٹرویو میں مزید کہا کہ وہ پاکستان کے سابق صدر جنرل ریٹائرڈ پرویز مشرف کے ساتھ کشمیر سمیت کئی دیگر اہم مسائل کے حل کے بالکل قریب پہنچ گئے تھے لیکن ’’پاکستان میں داخلی مسائل کی سنگینی کے باعث بات آگے نہیں بڑھ سکی تھی‘‘۔

Wahlen in Indien

بھارتی ریاست اترپردیش کے علاقے ایودھیا میں ہندو سادھوٴوں نے بھی اپنے ووٹ کا استعمال کیا

سنگھ نے لوک سبھا انتخابات کے تین مرحلے گذرجانے پر اطمینان کا اظہار کیا۔ انہوں نے اس یقین کا اظہار کیا کہ بھارتی ووٹرز کانگریس کی سربراہی والی حکومت کو ایک اور موقع ضرور دیں گے۔

Brinda Karat

کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا مارکسسٹ کی رہنما برندا کرات

بھارتی وزیر اعظم نے کہا کہ یو پی اے اتحاد نے ملک کی ترقی کے لئے گذشتہ پانچ برسوں کے دوران بہت کچھ کیا ہے لیکن ساتھ ہی یہ بھی کہا کہ وہ غربت کے خاتمے اور زراعت کے شعبے میں مزید کام کرنے کی خواہش رکھتے ہیں۔

اپوزیشن بھارتیہ جنتا پارٹی اور بائیں بازو کی جماعت سی پی آئی۔ایم نے بھارتی وزیراعظم من موہن سنگھ کی طرف سے اس انٹرویو میں کہی گئی متعدد باتوں پر شدید نکتہ چینی کی ہے۔

بھارت میں سولہ اپریل کو پارلیمان کی ایوان زیریں کے لئے انتخابات کے پہلے مرحلے کے تحت 124 نشستوں کے لئے ووٹ ڈالے گئے، تئیس اپریل کو دوسرے مرحلے میں 141 نشستوں کے لئے ووٹنگ ہوئی جبکہ تیس اپریل کو 107 سیٹوں کے لئے پولنگ ہوئی۔

ابھی ان انتخابات کے دو مزید مرحلے ہونے باقی ہیں۔ تیرہ مئی کو انتخابات کا پانچواں اور آخری مرحلہ ہے جبکہ سولہ مئی کو الیکشن نتائج کا اعلان کیا جائے گا۔