1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

کھیل

کامن ویلتھ گیمز اورمالی اسکینڈلز: کلماڈی سے پوچھ گچھ

گزشتہ برس اکتوبر میں نئی دہلی میں ہونے والے کامن ویلتھ گیمز کے انعقاد میں بڑے پیمانے پر بدعنوانیوں کے الزامات کے بعد پولیس نے بدھ کے روز ان مقابلوں کے منتظمِ اعلیٰ سے پوچھ گچھ کی ہے۔

default

نئی دہلی میں کامن ویلتھ گیمز کے منتظم اعلیٰ سریش کلماڈی بدھ کی صبح سینڑل بیورو آف انویسٹی گیشن CBI کے ہیڈ کوارٹرز پہنچے، جہاں تفتیش کاروں نے ان سے ان مقابلوں کے انتظامات اور کانٹریکٹس میں ہونے والی مبینہ بدعنوانی کے حوالے سے سوالات کیے۔ ان مقابلوں کے سلسلے میں ناقص انتظامات، سٹیڈیمز کے وقت پر مکمل نہ ہونے اور بڑے پیمانے پر مالی خردبرد کے الزامات کی گونج نہ صرف بھارتی میڈیا پر سنائی دیتی رہی ہے بلکہ بین الاقوامی میڈیا بھی اس سلسلے میں منتظمین کو کڑی تنقید کا نشانہ بناتا رہا ہے۔ ناقص انتظامات اور مالی بے ضابطگیوں کے باعث ان مقابلوں پر خرچ ہونے والے مجموعی سرمائے کا اندازہ تقریباﹰ چھ بلین ڈالر لگایا گیا ہے۔

Commonwealth Games Dorf

کلاڑیوں کی رہائش کے لئے بنایا گیا ایک گیمز ویلیج

ان مقابلوں کے اختتام کے تقریبا ڈھائی ماہ بعد گزشتہ برس دسمبر کے اواخر میں پولیس نے اس سلسلے میں کلماڈی کے زیراستعمال متعدد رہائش گاہوں پر بھی چھاپے مارے۔ بھارتی میڈیا سی بی آئی کو بھی تفتیشی کارروائیوں میں غفلت اور سستی برتنے پر تنقید کا نشانہ بنا رہا ہے۔

سی بی آئی کی طرف سے کلماڈی اور ان کے قریبی ساتھیوں پر تفتیش میں رکاوٹیں پیدا کرنے کے الزامات عائد کیے جا رہے ہیں۔ سی بی آئی کی طرف سے بھارتی حکومت سے مطالبہ بھی کیا گیا ہے کہ کلماڈی کے قریبی ساتھیوں کو ان کے عہدوں سے ہٹایا جائے، تاکہ تفتیشی عمل میں حائل رکاوٹیں دور ہوں اور تحقیقات تیزی سے آگے بڑھائی جا سکیں۔

66 سالہ کلماڈی ماضی میں بھارتی فضائیہ میں پائلٹ کے بطور خدمات سرانجام دے چکے ہیں اور متعدد سیاستدانوں سے قریبی روابط کے باعث انہیں خاصا بااثر سمجھا جاتا ہے۔ تاہم وہ اپنے مخالف سیاستدانوں اور بھارتی میڈیا کی تنقید پر مسلسل احتجاج بلند کرتے ہوئے خود کو بےگناہ قرار دیتے آ رہے ہیں۔

24 دسمبر کو ان کے زیراستعمال متعدد گھروں پر پولیس کے چھاپوں کے بعد انہوں نے اپنے ایک بیان میں کہا تھا : ’’میں اس معاملے پر ہر طرح کی تفتیش کا سامنا کرنے کے لیے تیار ہوں۔ میں اس وقت تک بے گناہ ہوں، جب تک مجھ پر جرم ثابت نہ ہو جائے۔‘‘

Indien Commonwealth Games Flash-Galerie

ان مقابلوں سے قبل بنایا گیا ایک پل گر گیا تھا

واضح رہے کہ کامن ویلتھ گیمز کے انعقاد میں مبینہ بدعنوانیوں کے الزامات کے بعد پولیس ان مقابلوں کے متعدد منتظمین سے پچھ گچھ کر چکی ہے۔ اس معاملے کو اس لیے بھی حساس سمجھا جا رہا ہے کیونکہ کلماڈی پہلے ہی سے متعدد مالی اسکینڈلز میں گھری حکمران جماعت کانگریس پارٹی کے رکن ہیں۔ تاہم کانگریس پارٹی کا کہنا ہےکہ وہ تفتیشی عمل کو ہر طرح سے شفاف بنا کر ذمہ داروں کو انصاف کے کٹہرے میں لا کھڑا کرے گی۔

رپورٹ : عاطف توقیر

ادارت : عصمت جبیں

DW.COM

ویب لنکس