1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

ڈیوس کے معاملے پر پیپلز پارٹی کے موقف میں تضاد

لاہور میں دو پاکستانی شہریوں کے قتل میں ملوث امریکی شہری ریمنڈ ڈیوس کے معاملے پر پاکستان کی برسر اقتدار جماعت پیپلز پارٹی کے موقف میں تضاد دیکھا جارہا ہے۔

default

کراچی میں صحافیوں سے گفتگو میں پیپلز پارٹی کی ترجمان فوزیہ وہاب کا کہنا تھا کہ ڈیوس کے پاس بزنس ویزہ ہے، اس لیے بین الاقوامی سطح پر پاکستان کی اچھی ساکھ کو داؤ پر نہیں لگانا چاہیے۔ تاہم فوزیہ وہاب نے ایک ٹیلی فون کال موصول ہونے کے فوراً بعد ہی اپنا بیان یہ کہہ کر واپس لے لیا کہ یہ اُن کی ذاتی رائے ہے۔

واضح رہے کہ ریمنڈ ڈیوس کی فائرنگ سے دو پاکستانی شہریوں کی ہلاکت اور بعد میں ایک مقتول کی بیوی کی خودکشی نے اس معاملے کو انتہائی حساس بنا دیا ہے۔

واشنگٹن کی جانب سے ریمنڈ ڈیوس کو ایک سفارت کار ظاہر کیا جارہا ہے اور اس کی فوری رہائی کے لیے اسلام آباد پر شدید سفارتی دباؤ ہے۔ امریکی موقف کے مطابق ڈیوس ایک سفارت کار ہے اور اسے بین الاقوامی قوانین کے تحت سفارتی استثنیٰ حاصل ہے۔

In Pakistan inhaftierter US Diplomat Raymond Allen Davis

ریمنڈ ڈیوس کے خلاف لاہور میں منعقدہ ایک مظاہرے کا منظر

عدالت نے ریمنڈ ڈیوس کو پولیس تحویل میں دے رکھا ہے۔ پیر کو کراچی میں صحافیوں سے گفتگو میں فوزیہ وہاب نے کہا، ’’ ہم نے ہمیشہ بین الاقوامی قوانین کی پابندی کی ہے۔‘‘ انہوں نے مزید کہا کہ امریکہ، پاکستان کی سب سے بڑی تجارتی منڈی ہے، جہاں سے ہر سال اربوں ڈالر کا زرمبادلہ حاصل ہوتا ہے۔ انہوں نے امریکہ میں مقیم پاکستانیوں کی جانب سے بھیجی جانے والی رقوم کی اہمیت کو بھی اجاگر کیا۔

Pakistan Hillary Rodham Clinton Shah Mehmood Qureshi

امریکی وزیر خارجہ ہلیری کلنٹن نے میونخ سکیورٹی کانفرنس میں اپنے پاکستانی ہم منصب شاہ محمود قریشی سے ملنے سے انکار کردیا تھا

ڈیوس کے معاملے پر پاکستانی رائے عامہ میں امریکہ مخالف جذبات ایک بار پھر ابھرے ہیں۔ فوزیہ وہاب کے بیان کی وضاحت کے لیے جب صدارتی ترجمان فرحت اللہ بابر سے رابطہ کیا گیا تو ان کا کہنا تھا کہ فوزیہ کا یہ بیان محض ان کی ذاتی رائے ہے۔ ’’ یہ نہ تو حکومتی پالیسی ہے نہ ہی پیپلز پارٹی کا موقف، یہ ان کا ذاتی بیان ہے۔‘‘ ان کے بقول حکومت واضح کرچکی ہے کہ اس امریکی شہری کا معاملہ عدالت میں ہے اور وہی اس کا فیصلہ کرے گی۔

پاکستان اور امریکہ کے درمیان رواں ماہ کی 23 اور 24 تاریخ کو اہم اسٹریٹیجک مذاکرات شیڈیول تھے تاہم امریکہ نے ان مذاکرات کو ملتوی کر دیا ہے۔ پاکستانی دفتر خارجہ کے ترجمان عبد الباسط نے امید ظاہر کی ہے کہ امریکہ جلد ان مذاکرات کو ری شیڈیول کردے گا۔

رپورٹ : شادی خان سیف

ادارت : عدنان اسحاق

DW.COM