1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

فن و ثقافت

ڈاکٹر عامر لیاقت کی رمضان ٹرانسمیشن، سوشل میڈیا پر شدید تنقید

ماہ رمضان کے شروع ہونے کے ساتھ ہی پاکستان کے ٹی وی چینلز پر رمضان ٹرانسمیشنز کا بھی آغاز ہو گیا ہے۔ ڈاکٹر عامر لیاقت نے سوشل میڈیا پر اپنی رمضان ٹرانسمیشن کا اشتہار جاری کر کے سوشل میڈیا پر دھوم مچا دی ہے۔

پاکستان میں خصوصی رمضان ٹرانسمیشن گزشتہ چند برسوں سے کافی مشہور ہیں۔ ٹی وی چینلز مختلف انداز سے ماہ رمضان کے پروگرامز پیش کرتے ہیں اور زیادہ سے زیادہ ریٹنگ حاصل کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔ اس مرتبہ بھی بہت سے ٹی وی چینلز ایک سے بڑھ کر ایک شو کرنے کی کوششوں میں ہیں۔

پاکستان ٹی وی چینل جیو سے منسلک ڈاکٹرعامر لیاقت اپنی خصوصی رمضان ٹرانسمیشن کی وجہ سے کافی شہرت رکھتے ہیں۔ وہ کئی مرتبہ دعویٰ کر چکے ہیں کہ رمضان میں دکھائے جانے والے ان کے خصوصی پروگرامز پاکستان میں سب سے زیادہ دیکھے جاتے ہیں۔ اس مرتبہ بھی ڈاکٹر عامر لیاقت کسی سے پیچھے نہیں ہیں۔ انہوں نے سوشل میڈیا پر اپنی خصوصی رمضان ٹرانسمیشن کے اشتہار کو جاری کیا جس نے سوشل میڈیا پر دھوم مچا دی ہے۔

اس اشتہار میں انہوں نے فوجی یونیفارم پہنا ہے اور انہیں گولی لگی ہوئی ہے۔ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے وہ چل بسے ہیں لیکن پاکستان کا جھنڈا بلند ہے۔ اس کے علاوہ یونیفارم میں ان کی اور تصاویر بھی سوشل میڈیا پر شیئر کی گئی ہیں۔

سوشل میڈیا پر کئی افراد نے ڈاکٹر عامر لیاقت کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے ان کی رائے میں یہ ریٹنگ لینے کی کوشش ہے۔ فیس بک کی صارف شنیلا سکندر نے لکھا، ’’رمضان کی دکانیں سج گئی ہیں ہر چینل پر۔‘‘ کئی افراد نے ڈاکٹر عامر لیاقت کی تصاویر کو فوٹو شاپ کر کے بھی شئیر کی ہیں۔

جہاں سوشل میڈیا پر عامر لیاقت کو تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے تو وہیں ان کے مداح ان کے حق میں بھی بیانات دے رہے ہیں۔

DW.COM