1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

معاشرہ

چینی حکومت دلائی لاما کے ساتھ بات چیت کرے: جرمنی کا مطالبہ

جرمن چانسلر انگیلا میرکل نے چینی وزیرِ اعظم وین جیا باؤ سے مطالبہ کیا ہے کہ چینی حکومت تبّتی بھِکشوؤں کے روحانی پیشوا دلائی لامہ کے ساتھ بات چیت دوبارہ شروع کرے۔

default

جرمن چانسلر میرکل اور چینی وزیرِ اعظم وین جیا باؤ

جرمن چانسلر انگیلا میرکل نے جرمنی کے دورے پر آئے چینی وزیرِ اعظم وین جیا باؤ کے سامنے ایک بار پھر جرمنی کا دیرینہ موقف دہرایا کہ جرمنی کی یہ شدید خواہش ہے کہ چینی حکوت دلائی لاما کے ساتھ تعطل شدہ مذاکرات کا دوبارہ آغاز کرے۔

Dalai Lama besucht Franken

تبّتی باشندوں کی خود مختاری کے داعی دلائی لامہ


تاہم جرمن چانسلر نے ساتھ ہی سفارتی ذبان میں یہ بھی کہنا ضروری سمجھا کہ وہ ہمیشہ یہ کہتی رہی ہیں کہ جرمنی اور چین کے تعلقات انتہائی اہم ہیں اور یہ اس بات سے زیادہ اہم ہیں کہ جرمنی نے دلائی لاما کے ساتھ مس طرح کے تعلقات قائم کیے ہیں۔ بقول جرمن چانسلر کے، جرمنی اور چین کا ایک دوسرے پر انحصار ہے اور جرمنی کی چین سے متعلق پالیسی وہی ہے جو پہلے تھی جو کہ تائیوان کے مسئلے کی وجہ سے تبدیل نہیں ہوئی ہے۔

بنیادی طور پر چینی وزیرِ اعظم کے جرمنی اور یورپ کے دورے کا مقصد عالمی اقتصادی بحران پر قابو پانے کے لیے تبادلہّ خیال کرنا ہے تاہم یورپ کے ساتھ چین کے سیاسی اختلافات اقتصادی امور میں ہمیشہ ہی ایک رکاوٹ رہے ہیں۔ خواہ مسئلہ تبّت کے باشندوں کی خود مختاری کا ہو یا چین میں انسانی حقوق کی مبینّہ خلاف ورزیوں کا، مغربی ممالک چین کے ساتھ اقتصادی تعاون کہ ان مسائل سے مشروط کرتے رہے ہیں اور اس بار بھی ایسا ہی ہوا ہے۔

Angela Merkel begrüßt Wen Jiabao 2

سیاسی اختلافات اپنی جگہ، مالیاتی منڈی میں چین کی اہمیت کو کون نظر انداز کرسکتا ہے؟ وزیرِ اعظم جیا باؤ کا برلن میں شاندار استبال کیا گیا۔


دلائی لاما کا مسئلہ چینی حکومت کے لیے اس حد تک حسّاس ہے کہ گزشتہ برس یورپی یونین کے ساتھ طے شدہ مذاکرات کو چینی حکومت نے محض اس لیے معطل کردیا تھا کہ اس وقت کے یورپی یونین کے صدر ملک فرانس کے صدر نکولا سارکوزی نے دلائی لاما کے ساتھ ایک ملاقات کی تھی۔

گو کہ چینی وزیرِ اعظم کا جرمنی میں شاندار استقبال ہوا اور ان کو جرمن افواج نے گارڈ آف آنر بھی پیش کیا، کم از کم ساٹھ تبتتّی یاشندوں نے جرمن چانسلر میرکل کے دفتر کے باہر مظاہرہ کیا اور جرمن حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ چینی حکومت پر دلائی لاما کے ساتھ مذاکرات کے لیے دباؤ ڈالے۔

Weltwirtschaftsforum Davos Wen Jiabao

چینی وزیرِ اعظم نے سوئٹزرلینڈ کے شہر داووس میں عالمی اقتصادی فورم میں بھی شرکت کی

اختلافی سیاسی امور کے برخلاف چین اور جرمنی نے چھ معاہدوں پر دستخط کیے جن میں سے ایک کا تعلق ماحولیاتی تبدیلی سے بھی ہے۔

اس سے قبل چینی وزیرِ اعظم نے داووس میں عالمی قاتصادی فورم میں بھی شرکت کی ۔ جرمنی میں ایک روز کے قیام کے بعد چینی وزیرِ اعظم برسلز جائیں گے جہاں وہ گزشتہ برس نومبر میں منسوخ کیے گئے یورپی کمیشن کے اجلاس میں شرکت کریں گے۔ وین جیا باؤ اسپین اور برطانیہ بھی جائیں گے۔

امکان ہے کہ جہاں جہاں چینی وزیرِ اعظم جیا باؤ پڑاؤ کریں گے تبّتی باشندے مظاہرہ کریں گے اور یورپی ممالک چین پر دلائی لاما کے ساتھ از سرِ نو مذاکرات شرروع کرنے کا مطالبہ کرتے کریں گے۔