1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

پی آئی اے نے’اے ٹی آر‘ طیارے گراؤنڈ کر دیے

پاکستان کی قومی ایئر لائن پی آئی اے نے ’ اے ٹی آر‘ طرز کے تمام طیاروں کو گراؤنڈ کرنے کا اعلان کیا ہے۔ ابھی گزشتہ روز اے ٹی آر کی ایک اور پرواز حادثے کا شکار ہونے سے بچ گئی۔

پاکستان انٹرنیشنل ایر لائنز کے مطابق اتوار کے روز ملتان سے کراچی جانے والی پرواز تکنیکی خراجی کی وجہ سے اس وقت منسوخ کر دی گئی، جب وہ اڑان کے لیے بالکل تیار تھی۔ پی آئی اے کے ترجمان دانیال گیلانی نے بتایا کہ اس واقعے کے بعد اے ٹی آر کو واپس پارکنگ میں کھڑا کر دیا گیا۔

 ان کے بقول ان طیاروں کو عارضی طور پر گراؤنڈ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ مقامی ذرائع نے بتایا ہے کہ ملتان سے کراچی کی ایک پرواز طیارے کے انجن میں آگ بھڑک اٹھنے کی وجہ سے منسوخ کی گئی تھی۔ دانیال گیلانی نے ان خبروں کو مسترد کر دیا۔

ابھی گزشتہ ہفتے ہی چترال سے اسلام آباد جانے والا ایک اے ٹی آر طرز کا جہاز حویلیاں کے پاس گر کر تباہ ہو گیا تھا اور اس واقعے میں سینتالیس افراد ہلاک ہو گئے تھے۔ اس حادثے کے بعد سے پی آئی اے پر شدید تنقید کا سلسلہ جاری ہے۔ پی آئی اے کے پاس اے ٹی آر 42 اور اے ٹی آر 72  طرز کے کل دس طیارے ہیں اور یہ زیادہ تر چھوٹے شہروں کے لیے پرواز کرتے ہیں۔

سول ایوی ایشن اتھارٹی نے پی آئی اے سے اے ٹی آر طرز کے تمام جہازوں کے شیک ڈاؤن ٹیسٹ کرانے کے لیے کہا ہے۔ اس تناظر میں گیلانی کا کہنا تھا، ’’سول ایوی ایشن اتھارٹی کے فیصلے کی روشنی میں پی آئی اے کے تمام اے ٹی آرز کے شیک ڈاؤن ٹیسٹ کرائے جائیں گے اور ٹیسٹ مکمل ہونے کے بعد ہی اے ٹی آرز کو پرواز کی اجازت دی جائے گی۔‘‘

فرانس کے اے ٹی آر 42 طرز کے اس جہاز کے دو ٹربو انجن ہوتے ہیں اور اس میں 48 مسافر تک سفر کر سکتے ہیں۔ یہ جہاز ہموار اور نا ہموار سطح سے اڑنے اور اترنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔ اس جہاز کے انجن امریکی کمپنی Pratt & Whitney کے تیار کردہ ہیں۔ چترال سے اسلام آباد کی پرواز کے حادثے کی تحقیقات جاری ہیں اور شاید اسی وجہ سے  اے ٹی آر کی جانب سے اس تناظر میں ابھی تک کوئی بیان سامنے نہیں آیا ہے۔