1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

فن و ثقافت

’پیٹر پین‘ سے ’پیٹرپورن‘ تک: راک اسٹار نزرل ایریئل کو سزا

انڈونیشیا کی ایک عدالت نے بین الاقوامی شہرت یافتہ گلوکار نزرل ایریئل کو جنسی ویڈیوز کے اجراء اور تشہیر کے الزام میں ساڑھے تین سال کی سزا سنائی ہے۔

default

نزرل ایریئل عالتی پیشی کے بعد صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے

نزرل ایریئل پر الزام تھا کہ انہوں نے ٹیلی وژن سے وابستہ دو نامور شخصیات کے ہمراہ ایک جنسی ویڈیو میں کام کیا اور ان شخصیات کو یہ اجازت دی کہ وہ ایسی ویڈیو بنا سکیں اور اس کی تشہیر کر سکیں۔

Indonesien Popstar Nazril muss wegen Sexvideos ins Gefängnis Luna Maya

عدالتی کارروائی سے قبل ایریئل اپنی گرل فرینڈ لونا مایا کے ساتھ

ملائیشیا اور انڈونیشیا کی مختلف ویب سائٹس پر ایریئل کی دو ویڈیوز پچھلے برس جولائی میں منظرِ عام پر آئی تھیں۔ ان ویڈیوز میں وہ ٹی وی سے منسلک دو اداکاراؤں لونا مایا اور کٹ تاری کے ساتھ جنسی عمل کرتے ہوئے فلم بند کیے گئے ہیں۔ ایریئل کے مطابق  انہوں نے موبائل فون کے ذریعے بنائی گئی ان ویڈیوز کی تشہیر کی اجازت نہیں دی تھی۔

راک بینڈ ’پیٹر پین‘ سے منسلک ایریئل کی عدالت میں حاضری کے موقع پر ان کے بے شمار مدّاحوں نے ہنگامہ آرائی کی اور ’ایریئل کو رہا کرو‘ کے نعرے لگائے۔ ایریئل کے مدّاحوں نے سوشل نیٹ ورکنگ ویب سائٹ ٹوئٹر پر بھی اس حوالے سے لاتعداد بیانات رقم کیے۔

اس موقع پر انڈونیشیا کی اسلام پسند تنظیموں نے انتیس سالہ گلوکار کے خلاف مظاہرے کیے اور ایریئل کی وین پر انڈے اور ٹماٹر پھینکے۔ اس موقع پرایریئل کے پرستاروں اور اسلام پسندوں کے درمیان ہاتھا پائی کی بھی اطلاعات موصول ہوئی ہیں۔

عدالت میں حاضری کے موقع پر ایریئل مطمئن نظر آئے۔ ذرائع ابلاغ کے نمائندوں کے سوالوں کا جواب دیتے ہوئے ایریئل نے کہا کہ وہ فیصلے کے خلاف اپیل کے بارے میں غور کریں گے۔

Indonesien Popstar Nazril muss wegen Sexvideos ins Gefängnis Anhänger

راک اسٹار ایریئل کے پرستار عدالتی فیصلے کے خلاف نعرے لگاتے ہوئے

جہاں ایک طرف ایریئل کے خلاف عدالتی فیصلے پر ان کے مدّاح غمزدہ دکھائی دیے، وہاں اسلام پسندوں کا کہنا تھا کہ ایریئل کے خلاف عدالتی فیصلہ خاصا نرم تھا اور اس پر انہیں مایوسی ہوئی ہے۔ انتہا پسند اسلام پسند تنظیموں کا کہنا ہے کہ اس نوعیت کے جرم پر سنگ باری کے ذریعے موت کی سزا دی جانی چاہیے تھی۔

راک اسٹار ایریئل کے خلاف فیصلے پر اپنے جذبات کا اظہار کرتے ہوئے ان کے ایک پرستار کا کہنا تھا، انہیں دکھ ہے کہ وہ ایریئل کو کافی عرصے تک ٹی وی پر دیکھ نہیں پائیں گے۔

اس واقعے کے بعد انڈونیشیا میں انٹرنیٹ پر جنس سے متعلق مواد کو قابو میں رکھنے کے حوالے سے مطالبات سامنے آ رہے ہیں۔ دوسری جانب سول سوسائٹی کے تنظیموں نے پورنوگرافی سے متعلق سن دو ہزار آٹھ میں منظور کیے گئے ایک قانون پر کڑی نکتہ چینی کی ہے اور اس کی تنسیخ کا مطالبہ کیا ہے۔

رپورٹ: شامل شمس

ادارت: امجد علی

DW.COM