1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

معاشرہ

پُرمسرت زندگی چاہیے؟ فیس بُک چھوڑ دیں

کیا آپ ہر وقت پریشان رہتے ہیں؟ سماجی زندگی سے دور ہوتے جا رہے ہیں اور ارتکاز میں مشکلات کا سامنے ہے؟ ایک نئی اسٹڈی ان تمام چیزوں کی ذمہ داری فیس بُک پر عائد کرتی ہے۔

اس اسٹڈی کے نتائج کے مطابق ایسے افراد جو ایک ہفتے تک سوشل میڈیا سے دور رہے وہ دوسروں کے مقابلے میں خود کو زیادہ خوش محسوس کر رہے تھے۔

’ہیپی نیس ریسرچ انسٹیٹیوٹ‘ (HRI) کی طرف سے کرائی جانے والی اس تحقیق میں ڈنمارک کے 1095 افراد پر مشتمل سیمپل لیا گیا۔ انہیں دو مختلف گروپوں میں تقسیم کیا گیا۔ ان میں سے ایک گروپ نے فیس بُک کا استعمال جاری رکھا جبکہ دوسرے گروپ نے سماجی رابطوں کی اس ویب سائٹ کا استعمال ترک کر دیا۔

HRI کے چیف ایگزیکٹیو مائیک وائکنگ نے ڈنمارک کے دارالحکومت کوپن ہیگن میں خبر رساں ادارے اے ایف پی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا، ’’ہم نے فیس بُک پر توجہ اس لیے دی کیونکہ یہ سوشل میڈیا ایسا ہے جسے گروپ میں شامل زیادہ تر افراد استعمال کرتے تھے اور ان میں ہر عمر کے لوگ شامل تھے۔‘‘

ایک ہفتے کے بعد وہ لوگ جو فیس بُک استعمال نہیں کر رہے تھے ان کا کہنا تھا کہ وہ اپنی زندگیوں سے زیادہ مطمئن ہیں۔ ان میں سے 88 فیصد لوگوں نے خود کو خوش قرار دیا۔ دوسری طرف اُس گروپ کے 81 فیصد لوگوں نے خود کو خوش قرار دیا جو فیس بُک استعمال کرتے رہے تھے۔

فیس بُک استعمال نہ کرنے والے گروپ کے 84 فیصد ارکان کا کہنا تھا کہ وہ اپنی زندگی کے معترف ہیں جبکہ محض 12 فیصد کا کہنا تھا کہ وہ اپنی زندگیوں سے مطمئن نہیں ہیں۔ فیس بُک استعمال کرنے والے گروپ کے 75 فیصد ارکان اپنی زندگیوں سے مطمئن تھے اور اسی گروپ کے 20 فیصد افراد کا کہنا تھا کہ وہ اپنی زندگیوں سے غیر مطمئن ہیں۔

فیس بُک استعمال کرنے والے افراد میں فیس بُک استعمال نہ کرنے والوں کی نسبت نا خوش ہونے کے 39 فیصد زیادہ امکانات ہوتے ہیں

فیس بُک استعمال کرنے والے افراد میں فیس بُک استعمال نہ کرنے والوں کی نسبت نا خوش ہونے کے 39 فیصد زیادہ امکانات ہوتے ہیں

اس تجربے کے خاتمے پر فیس بُک سے دور رہنے والے افراد نے زیادہ بہتر سماجی زندگی اور چیزوں پر توجہ مرکوز کرنے کے مسئلے میں کمی کا بتایا۔ دوسرے گروپ کے لوگوں نے اپنی زندگیوں میں ایسی کسی تبدیلی کو رپورٹ نہیں کیا۔

اس تحقیق کے مصنفین نے لکھا ہے، ’’اس بات پر توجہ مرکوز کرنے کی بجائے کہ ہمیں کیا چاہیے، ہمارے اندر بدقسمتی سے یہ رجحان پایا جاتا ہے کہ ہم دوسروں کی زندگی پر فوکس کرتے ہیں۔‘‘

دوسرے معنوں میں فیس بُک استعمال کرنے والے افراد میں فیس بُک استعمال نہ کرنے والوں کی نسبت نا خوش ہونے کے 39 فیصد زیادہ امکانات ہوتے ہیں۔