1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

پرتگال میں پارلیمان تحلیل، نئے الیکشن جون میں

پرتگالی صدر آنیبال کاواکو سلوا نے ملکی پارلیمان کو تحلیل کردیا ہے اور اعلان کیا ہے کہ قبل از وقت عام انتخابات جون کے اوائل میں ہوں گے۔

default

پرتگالی صدر آنیبال کاواکو سلوا

صدر  آنیبال کاواکو سلوا نے یہ اعلان جمعرات کے روز کیا۔ یہ اعلان ایک ایسے وقت سامنے آیا ہے جب اس یورپی ملک کو شدید مالی بحران کا سامنا ہے اور امکان ہے کہ یورپی یونین کو پرتگال کو بھی یونان اور آئرلینڈ کی طرح بیل آؤٹ کرانا پڑے گا۔

EU-Afrika Gipfel in Lissabon, Portugal Flaggen der europäischen und afrikanischen Nationen, die bei dem Gipfel vertreten sind Symbolbild

امکان ہے کہ یورپی یونین کو پرتگال کو بھی یونان اور آئرلینڈ کی طرح بیل آؤٹ کرانا پڑے گا

صدر سلوا نے لزبن میں اس بارے میں ایک اعلان میں کہا کہ انہوں نے گزشتہ ہفتے مستعفی ہو جانے والے وزیر اعظم یوزے سوکراٹیش کا استعفیٰ قبول کر لیا ہے، جو اپنی حکومت کے بہت زیادہ مالیاتی بچت کے پروگرام کے لیے پارلیمانی ارکان کی اکثریت کی تائید حاصل کرنے میں ناکامی کے بعد مستعفی ہو گئے تھے۔

صدر کے مطابق اگلی حکومت کو ایک غیر معمولی اقتصادی اور معاشی بحران کا سامنا کرنا ہوگا اور یہ کہ ملک کو اس وقت اتنے شدید مسائل درپیش ہیں کہ کسی کو بھی اس غلط فہمی میں نہیں رہنا چاہیے کہ یہ ایک دو روز میں حل ہو سکتے ہیں۔

صدر سلوا کے مطابق ملک کی تمام سیاسی جماعتوں نے ان سے قبل از وقت انتخابات کے انعقاد کے فیصلے کا مطالبہ کیا تھا۔

جمعرات کے روز پرتگال کے قومی شماریاتی ادارے نے جو اعداد و شمار جاری کیے، ان کے مطابق ملکی بجٹ کا خسارہ سن 2010 کے دوران مجموعی قومی پیداوار کے 8.6 فیصد تک پہنچ گیا، جو کہ یورپی یونین کے ساتھ طے کی جانے والی 7.3 فیصد کی شرح سے بھی زیادہ ہے۔

رپورٹ: شامل شمس ⁄  خبر رساں ادارے

ادارت: مقبول ملک

DW.COM