1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

پاک افغان سرحد پر بم دھماکہ، 20 پاکستانی سیکیورٹی اہلکار ہلاک

پاک افغان سرحد طورخم پر خاصہ دار فورسز پر خود کش حملے میں 20 اہلکار ہلاک جبکہ 20سے زیادہ زخمی ہوئے ہیں۔ زخمیوں کو طبی امداد کیلئے لنڈی کوتل ہسپتال پہنچایا گیا ہے۔

default

زخمیوں میں سے کئی ایک کی حالت نازک بتائی جاتی ہے۔ خیبر ایجنسی کے پولیٹیکل ایجنٹ طارق حیات خان کا کہنا ہے کہ ’’یہ دھماکہ ایسے وقت کیا گیا، جب خاصہ دار فورسز کے جوان افطاری کی تیاریوں میں مصروف تھے۔ اِسی دوران ایک خودکش حملہ آور نے خاصہ دار فورس کی بیرک کے اندر داخل ہوتے ہوئے خود کو دھماکے سے اڑادیا۔‘‘

ان کا کہنا ہے کہ اس دھماکے میں ابتدائی طور پر خاصہ دار فورس کے 20 جوان ہلاک جبکہ 20 سے زیادہ زخمی ہوئے ہیں جنہیں طبی امداد فراہم کی جارہی ہے۔

2 Waziristan.jpg

دھماکے کے بعد ایک سیکیورٹی اہلکار چوکنّا کھڑا ہے

پولیٹیکل حکام نے اِس واقعے کے بعد علاقے کو گھیرے میں لیتے ہوئے سیکورٹی سخت کر دی ہے۔ حکام اس بات کی بھی تحقیقات کر رہے ہیں کہ خود کش حملہ آور سرحد پار(افغانستان) سے آیا تھا یا پھر آیا وہ مقامی باشندہ تھا۔

دھماکے سے خاصہ دار فورس کی عمارت مکمل طور پر تباہ ہوگئی ہے۔ یہ بات قابل ذکر ہے کہ چند روز قبل افغانستان میں ہونے والے انتخابات کو پر امن بنانے کیلئے طورخم کے مقام پر پاک افغان سرحد تین دن کیلئے بند کیا گیا تھا۔

رپورٹ: فرید ا للہ خان

ادارت: امجد علی