1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

پاکستان کے چیلنجز سے آگاہ ہیں، جرمنی

جرمن وزیر خارجہ گیڈو ویسٹر ویلے نے کہا ہے کہ برلن حکومت پاکستان کو درپیش اہم اقتصادی و سیاسی چیلنجز سے آگاہ ہے اور اسی لیے مستقبل میں پاکستان کے ساتھ تعلقات کو مزید فروغ دے گی۔

default

جرمن وزیر خارجہ اپنے پاکستانی ہم منصب کے ساتھ

جرمن وزیر خارجہ گیڈو ویسٹر ویلے نے ہفتہ کو اسلام آباد پہنچے پر اپنے پاکستانی ہم منصب شاہ محمود قریشی کے ساتھ وفود کی سطح پر ملاقات کی۔ اس ملاقات کے بعد دفتر خارجہ میں مشترکہ نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے گیڈو ویسٹر ویلے نے کہا کہ جرمنی پاکستان کو درپیش اہم اقتصادی و سیاسی چیلنجز سے آگاہ ہے اور اسی لیے وہ مستقبل میں پاکستان کے ساتھ تعلقات کو مزید فروغ دے گا۔

جرمن وزیر خارجہ نے پاکستانی صوبہ پنجاب کے گورنر سلمان تاثیر کے قتل کی مذمت کرتے ہوئے اسے دہشت گردی کی ایک بھیانک واردات قرار دیا۔

اس موقع پر وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ پاکستان اور جرمنی جلد ہی سٹریٹجک ڈائیلاگ شروع کریں گے۔ انہوں نے مزید کہا کہ جرمنی نے پاکستان کے متاثرینِ سیلاب کی بحالی کے لیے تین سو ملین ڈالر کی جو امداد دی ہے، اس میں سے دو دس ملین ڈالر جرمن شہریوں نے بھجوائے ہیں، جو پاکستان اور جرمنی کے قریبی تعلقات کی مثال ہے۔

Pakistan Besuch Westerwelle

دونوں ممالک کے وفود کی ملاقات

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ انہوں نے اپنے جرمن ہم منصب کے ساتھ پاکستان کو یورپی منڈیوں تک رسائی دلوانے کےعلاوہ اقتصادیات کے دیگر شعبوں میں تعاون پر بھی تبادلہ خیال کیا ہے۔

انہوں نے کہا، ’ہم نے پاکستان میں سرمایہ کاری اوردونوں ملکوں کے درمیان اقتصادی تعلقات کے فروغ پر تبادلہ خیال کیا ہے، اس مقصد کے لیے خاص طور ہم نے دو شعبوں، توانائی اور زراعت میں تعاون پر بات چیت کی ہے۔‘

گیڈو ویسٹر ویلے اتوار کو پاکستان کی اہم سیاسی و عسکری قیادت سے ملاقاتیں کریں گے جبکہ توقع کی جا رہی ہے کہ وہ پاکستانی سیلاب متاثرین کے ساتھ اظہار یکجہتی کے لیے متاثرین کے کسی کیمپ کا بھی دورہ کریں گے۔

رپورٹ: شکورحیم، اسلام آباد

ادارت: ندیم گِل

DW.COM